ڈی آئی خان کے حالات پولیس کے کنٹرول سے باہر ہیں، فوجی آپریشن کیا جائے، علامہ مختار امامی

  • جمعہ, 10 اگست 2018 11:32

شیعہ نیوز(پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) ڈیرہ اسماعیل خان میں جاری مسلسل دہشتگردی اور ٹارگٹ کلنگ کے واقعات کی شدید مذمت کرتے ہیں، 10 اگست کو بعد از نماز جمعہ ملک گیر احتجاج کریں گے، ڈی آئی خان کا علاقہ اہل تشیع کی مقتل گاہ بنا ہوا ہے۔ ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی ترجمان علامہ مختار احمد امامی نے میڈیا سیل سے جاری اپنے بیان میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ ڈی آئی خان کے حالات پولیس انتظامیہ کے کنٹرول سے باہر ہو چکے ہیں، دہشت گرد علاقے میں آزادانہ وارداتیں کرتے پھر رہے ہیں، گذشتہ چند دنوں میں خود پولیس اور انتظامیہ سمیت کئی شہری ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنے ہیں، صوبہ میں حکومتی رٹ کہیں نظر نہیں آ رہی، ہم ڈی آئی خان میں فوجی آپریشن کا مطالبہ کرتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ڈیرہ اسماعیل خان کی عوام کو دہشت گردوں کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑ سکتے، ہم ان کے ساتھ کھڑے ہیں اور ملک بھر میں ان پر ہونے والے ظلم اور انتظامیہ کی مجرمانہ خاموشی کے خلاف احتجاج کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ آف پاکستان کے ڈی آئی خان میں فرقہ وارانہ ٹارگٹ کلنگ پر سوموٹو ایکشن لینے کے باوجود انتظامیہ و پولیس دہشتگردی کی مسلسل وارداتوں سے نمٹنے کے لئے سنجیدہ نظر نہیں آ رہی ہے، آئی جی خیبر پختونخواہ کا سپریم کورٹ میں فرقہ وارانہ ٹارگٹ کلنگ کیس پر بیان ان کی بے بسی اور نااہلی کا ثبوت ہے۔

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.