گلگت بلتستان کو حقوق دینا ہماری ذمہ داری ہے، چیف جسٹس

  • منگل, 11 ستمبر 2018 10:31

شیعہ نیوز(پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) چیف جسٹس سپریم کورٹ جسٹس ثاقب نثار نے گلگت بلتستان آرڈر 2018ء میں ترمیم کے حوالے سے فریقین سے تجاویز طلب کرلی ہیں۔ سپریم کورٹ میں گلگت بلتستان آرڈر 2018ء کیس کی سماعت ہوئی، دوران سماعت چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ سپریم کورٹ نے گلگت بلتستان آرڈر کو بحال کیا ہے، آرڈر میں کیا ترامیم کی جائیں، اس حوالے سے عدالت کو آگاہ کیا جائے۔ یہ بھی بتایا جائے کہ جی بی آرڈر کے حوالے سے پارلیمنٹ سے قانون سازی کرانی ہے یا نہیں، کابینہ سے مشاورت کرکے آگاہ کیا جائے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ گلگت بلتستان کے لوگ پاکستان سے بے حد پیار کرتے ہیں، گلگت بلتستان کے دشور گزار پہاڑوں پر پاکستان کے جھنڈے بنے ہوئے ہیں، جی بی کو حقوق دینا ہماری ذمہ داری ہے۔ چیف جسٹس نے اعتزاز احسن کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اعتزاز صاحب آپ ہماری رہنمائی کریں، یہ ایک اہم مسئلہ ہے۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر فریقین سے گلگت بلتستان آرڈر 2018ء کے حوالے سے تجاویز طلب کرتے ہوئے سماعت دو ہفتوں کیلئے ملتوی کر دی۔

واضح رہے کہ نون لیگ کی سابق وفاقی حکومت نے گلگت بلتستان میں گورننس آرڈر 2009ء کی جگہ گلگت بلتستان آرڈر 2018ء جاری کر دیا تھا، اس آرڈر کے تحت پہلے گلگت بلتستان کونسل کو ختم کیا گیا، تاہم بعد میں ترمیم کرتے ہوئے اسے بحال رکھا گیا، تاہم اس کے اختیارات محدود کر دیئے گئے تھے، رکن کونسل سعید افضل نے نئے آرڈر کو سپریم اپیلیٹ کورٹ گلگت بلتستان میں چیلنج کر دیا، رکن کونسل کی درخواست پر سپریم اپیلیٹ کورٹ نے گلگت بلتستان آرڈر کو پہلے معطل پھر کالعدم قرار دے کر پیپلزپارٹی کی حکومت کی جانب سے لاگو گورننس آرڈر 2009ء کو مکمل طور پر بحال کر دیا۔ وفاقی حکومت نے جی بی کی عدالت کے فیصلے کو سپریم کورٹ آف پاکستان میں چیلنج کر دیا۔ جس کے بعد 08 اگست 2018ء کو سپریم کورٹ نے سپریم اپیلیٹ کورٹ کا فیصلہ معطل کرتے ہوئے گلگت بلتستان آرڈر کو بحال کر دیا۔

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.