امام حسینؑ نے آمریت کا اصل روپ دنیا کے سامنے بے نقاب کیا، ذاکرین

  • جمعہ, 14 ستمبر 2018 10:41

شیعہ نیوز(پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) اسلام کی سر بلندی اور شریعت محمدی کی بقا ء کیلئے قربانیاں پیش کرنے والے کربلا کے عظیم شہداء کی یاد میں عشرہ محرم کی مجالس کا سلسلہ جڑواں شہروں میں گزشتہ روز بھی جاری رہا ۔امامبارگاہ قصر امام موسیٰ کاظمؑ آئی ٹین اسلام آباد میں مجلس سے خطاب کرتے ہوئے علامہ ضمیر حسین نقوی نے کہا کہ حسینؑ ابن علیؑ نے آمریت و یزیدیت کا اصل روپ دنیا کے سامنے بے نقاب کرنے کیلئے مدینہ چھوڑا اور صحرائے کربلا کو آباد کرکے اپنا بھرا گھر راہِ خدا میں لٹا دیا مگر فاسق و فاجر کی بیعت نہیں کی۔قدیمی امامبارگاہ میں انجمن اثناء عشری کے زیراہتمام عشرہ محرم کی دوسری مجلس سے ملک علی رضا کھوکھر نے خطاب کیا۔امامبارگاہ الحسین بنگش کالونی میں علامہ غلام جعفر جتوئی نےمجلس سے خطاب کرتے ہوئے فلسفہ شہادت حسین پر روشنی ڈالی۔امامبارگاہ قصر ابوطالب میں علامہ فضل عباس ہمدانی نے مجلس سے خطاب کیا ۔امامبارگاہ زینبہ قصر ابوطالب میں انجمن غلامان ابوطالب اورام البنین ڈبلیوایف اور انجمن دختران اسلام کے زیراہتمام عشرہ محرم کی مجلس سے خطاب کرتے ہوئے سیدہ بنت علی موسوی نے کہا کہ قرآن مجید خداوندعالم کی آخری کتاب اور شریعت محمدی آخری شریعت ہے ۔انجمن فیض پنجتن کے زیراہتمام امام بارگاہ زین العابدین سیٹٹلائٹ ٹائون
� راولپنڈی میں مجلس سے خطاب کرتے ہوئے علامہ سید قمرحیدرزیدی نے کہا کہ ہر ظالم کا انجام عبرتناک ہوتا ہے اور مظلوم کا لہو اسکے تذکرے کی بقاء اور عروج کی صورت میں ہمیشہ سربلند رہتا ہے۔علامہ شیخ اعجاز حسین مدرس نے بھی خطاب کیا۔ دربار عالیہ سخی شاہ پیارا کاظمی المشہدی چوہڑ ہڑپال میں علامہ مطلوب حسین تقی ،امامبارگاہ کرنل مقبول حسین میں ڈاکٹر علامہ شبیہ الحسن رضوی ،امبارگاہ ناصر العزا میں علامہ حافظ تصدق حسین ،امامبارگاہ حفاظت علی شاہ بوہڑ بازار میں علامہ شکیل اختر ،قصر خدیجہ ترلائی کلاں میں علامہ بشارت حسین امامی،امامبارگاہ گریسی لائن میں مولانا ضمیر حسین نقوی ،ذاکر غلام فرید‘امامبارگاہ شہیدان کربلا ٹائر بازار اور قصر زینب پیر گروٹی میں مولانا اجلال حیدر حیدری نے مجالس سے خطاب کیا۔

 

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.