زیر حراست اور پُراسرار ہلاکتیں ایک خوفناک منصوبہ ہیں، مزاحمتی قائدین

  • منگل, 11 ستمبر 2018 12:37

شیعہ نیوز(پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) مقبوضہ کشمیر کی مشترکہ مزاحمتی قیادت نے حاکم الرحمان سلطانی کی ہلاکت کے خلاف 14 ستمبر بروز جمعہ سوپور اور علاقہ زینہ گیر میں تمام کاروباری سرگرمیاں معطل رکھنے اور نماز جمعہ کے موقع پر انہیں خراج عقیدت ادا کرنے کی اپیل کی ہے۔ مزاحمتی قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے حیدرپورہ سرینگر میں ایک ہنگامی اجلاس میں زیرِ حراست اور پُراسرار ہلاکتوں سے پیدا شُدہ نازک ترین سیاسی صورتحال پر تفصیلی غور و خوض کیا۔ انہوں نے سوپور میں تحریک حریت کے ساتھ وابستہ ایک سرگرم رُکن حاکم عبدالرحمان سلطانی کو انتہائی بے دردی کے ساتھ شہید کرنے کی بزدلانہ حرکت کی شدید ترین الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اسے ایجنسیوں کی کارستانی قرار دیا۔

مزاحمتی قیادت نے کہا کہ حریت پسند راہنماؤں کی پُرامن سیاسی سرگرمیوں کو معطل کرنے کے لئے قتل و غارتگری کی بزدلانہ کارروائیوں کو عملانے کا آغاز ہوا ہے، مزاحمتی قیادت کوئی بھی دباؤ قبول نہیں کرے گی۔ مزاحمتی قیادت نے نسیم باغ سرینگر میں اشفاق احمد نامی نوجوان کے قتل کو زیرِ حراست قتل قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس حراستی قتل کو کِسی عسکری تنظیم کے کھاتے میں ڈالنے کی ناکام کوشش کرتے ہوئے شاطرانہ چالوں سے یہاں کی عسکری تنظیموں میں آپسی خانہ جنگی کو ہوا دینے کی مذموم کوششیں کی گئی ہے۔

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.