اتحاد بین المسلمین کے داعی کے گلگت داخلہ پر پابندی لگانا تعصبات کو فروغ دینا ہے، آئی ٹی پی جی بی

  • پیر, 17 ستمبر 2018 11:55

شیعہ نیوز(پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) اسلامی تحریک پاکستان گلگت بلتستان کے صوبائی سیکرٹریٹ سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ااتحاد بین المسلمین کے داعی کے گلگت داخلہ پر پابندی لگانا تعصبات کو فروغ دینا ہے۔ علامہ ساجد نقوی ملی یکجہتی کونسل کے سینیئر نائب صدر ہیں، پابندی بلا جواز ہے۔ عزاداری کے اجتماعات انسانیت کے علمبردار ہیں اور عزاداری خوف و ہراس کی فضا میں قابل قبول نہیں ہے۔ بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ قائد ملت جعفریہ علامہ سید ساجد علی نقوی کے گلگت داخلہ پر پابندی کو سخت تشویش کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے، ستم ظریفی یہ ہے کہ عدل و انصاف کے تقاضوں کو پورا کرنے کے بجائے توازن کی پالیسی اپنائی جاتی ہے، جس کا فائدہ ہمیشہ شرپسند اٹھاتا آیا ہے، ایک عرصہ سے محسوس کیا جا رہا ہے کہ فورتھ شیڈول کا مرحلہ ہو یا امن و امان کو یقینی بنانے کا مرحلہ، انتظامیہ اور حکومت بیلنس کی غیر منطقی پالیسی کا سہارا لیتی ہے، جس کا فائدہ ہمیشہ فرقہ پرست اور شرپسند کو ملا ہے۔

گذشتہ دنوں مقامی انتظامیہ کی جانب سے محرم الحرام کے حوالے سے فرقہ پرست جنہوں نے ہمیشہ ملکی سالمیت اور امن و امان کو داؤ پر لگایا ہے، کے ساتھ ملکی سطح کی سنجیدہ اور تمام مسالک کیلئے قابل قبول شخصیت علامہ سید ساجد علی نقوی کا نام بھی بیلنس کی مجبور پالیسی کے تحت شامل کیا گیا، جس سے محب وطن اور امن پسند شہریوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچی ہے اور عوام میں سخت تشویش پائی جاتی ہے۔ علامہ ساجد نقوی ملکی سطح پر معتدل اور سنجیدہ قیادت کے طور پر جانے جاتے ہیں اور تمام مسالک کے مشترکہ فورم ملی یکجہتی کونسل کے سینیئر نائب صدر ہیں، جن کو دوسرے افراد کی فہرست میں شامل کرنا ملکی سطح پر اتحاد بین المسلمین کے عمل کو سبوتاژ کرنے کے مترادف سمجھا جا سکتا ہے، جو کسی صورت قابل قبول نہیں ہے۔

محرم الحرام محسن انسانیت حضرت امام حسین کی یاد منانے کا نام ہے اور عزاداری کے اجتماعات انسانیت کے علمبردار ہیں، ہم امید رکھتے ہیں کہ عزادار انسانیت کا درس دیتے ہوئے شرپسندوں اور دہشت گردوں کے عزائم کو ناکام بنائیں گے۔ حالیہ دہشت گردی کی لہر کے بعد عزاداروں کو اپنی صفوں میں یکجہتی پیدا کرنے کے ساتھ دہشت گردوں پر نظر رکھنے کی ضرورت ہے اور مقررین حضرات سے امید کرتے ہیں کہ معاشرہ کو اصلاح کی دعوت دیں اور اسلام کا روشن چہرہ سامعین تک پہنچائیں، عزادار کسی بھی صورت خوف و ہراس کی فضا قبول کرنے کیلئے تیار نہیں ہیں اور کھلی فضا میں عزاداری کی امید رکھنا استحکام پاکستان کی علامت سمجھتے ہیں۔

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.