یمن جنگ میں شمولیت کےمبینہ مطالبے پر پاکستان کا سعودیہ سے امداد نا لینے کا انکشاف

  • جمعہ, 12 اکتوبر 2018 13:03

شیعہ نیوز(پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) وزیر اطلاعات ونشریات فواد چوہدری نے انکشاف کیا ہے کہ سعودی اور اماراتی حکومتوں کی جانب سے پیش کردہ شرائط کی بنیاد پر امدادہمارے اسٹریٹیجک اور اکنامک مفادات کے پیش نظر سودمند نہیں تھی، اسی بناءپر ہمیں آئی ایم ایف کی جانب جانا پڑا ہے،سعودیہ عرب اور متحدہ عرب امارات سے ہم نے پیسے مانگے تھے لیکن چونکہ دنیا اپنے مطلب کی ہے کوئی کسی پر احسان نہیں کرتاان خیالات کا اظہار پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات فوادچوہدری نے ایک نجی ٹی وی چینل کےپروگرام میں اینکر عاصمہ شیرازی سےگفتگو کرتے ہوئے کیا۔

فواد چوہدری کے مطابق پاکستان نے اقتصادی مشکلات کے حل کیلئے امریکہ کے بجائے سعودیہ اور متحدہ عرب امارات کی امداد کی پیشکش کو ترجیح دی تھی بعد ازاں سعودیہ اور متحدہ عرب امارات کی جانب سے ایسی شرائط سامنے آئیں جن کے ساتھ ہمارے لئےامدادکا حصول اسٹریٹیجک اور اکنامک مفادات کو متاثر کرتااسی بات کے پیش نظر ہم نے آئی ایم ایف سے رجوع کرنے کو بہتر جانا، ماہرین بین الاقوامی تعلقات اور تجزیہ کاروں کاکہنا ہے کہ پاکستان کی نومنتخب حکومت کی جانب سے سعودیہ اور عرب امارات کی امدادی پیش کش کے مقابل آئی ایم ایف سے رجوع کرنے کا سبب سعودی حکومت کی جانب سے پاکستان پریمن میں جاری سعودی جارحیت میں معاونت اور جنگ میں اعلانیہ شمولیت کی مبینہ شرط ہے ۔جو کہ کسی صورت موجودہ حکومت کی خارجہ پالیسی اور وزیر اعظم عمران خان کے غیروں کی جنگ میں ملوث نا ہونے والے بیانیے سے مطابقت نہیں رکھتی ۔

واضح رہے کہ گذشتہ نواز دور حکومت میں پاکستان نے سعودی دبائواور امدادکے پیش نظر خفیہ معاہدے کے تحت خلاف آئین وقانون سابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف کو سعودی اتحادی فوج کی سربراہی کیلئے روانہ کیا جنہوں نے یمن پر جاری سعودی اتحادی افواج کی جارحیت میں کمانڈنگ رول اداکیا اور لاکھوں یمنی مسلمانوں کو شہیداور بے گھر اور ہزاروں بچوں کو بے دردی سے شہید کیا ، سابقہ حکومت کے اس اقدام نے عالمی سطح پر پاکستان کی غیر جانبدار حیثیت اور امت مسلمہ میں قائدانہ اور مصالحانہ کردار کو بری طرح متاثر کیا، وزیر اعظم عمران خان کے حالیہ دورہ سعودیہ عرب اور وہاں ایک جریدے کو دیئے گئےانٹرویو کے بعد یہ افواہیں زیر گردش تھیں کے پاکستان سعودی حکومت سے امداد کے بدلے یمن جنگ میں حصہ دار بننے گا جس سے پاکستان کی موجودہ حکومت کے عالم اسلام میں کشیدگی کے خاتمے کیلئے مصالحتی کردار اداکرنے کے دعوے کی نفی ہوگی البتہ وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات فوادچوہدری کے اس حالیہ بیان سے کہ پاکستان نے سعودی شرائط پر امداد لینے کے بجائے آئی ایم ایف سے رجوع کرنے کو ترجیح دی سے تمام افواہوں نے دم توڑ دیا ہے ۔

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.