مشرق وسطی

نیتن یاہو جھوٹے بیانات کے ذریعے مہلت لینا چاہتے ہیں، حسام بدران

شیعہ نیوز: حماس کے اعلی رہنما حسام بدران نے کہا ہے کہ نیتن یاہو کی طرف سے مذاکرات کے جھوٹے بیانات کا مقصد نسل کشی کے لئے مہلت لینا ہے۔

الجزیرہ نے کہا ہے کہ حماس کے اعلی رہنما نے مذاکرات کے حوالے سے نیتن یاہو کے بیان کو جھوٹ پر مبنی قرار دیا ہے۔

تنظیم کے اعلی رہنما حسام بدران نے کہا ہے کہ نیتن یاہو مذاکرات کے بارے میں جھوٹے بیانات دیتے ہیں تاکہ غزہ میں فلسطیینیوں کی نسل کشی کے لئے مزید مہلت حاصل کی جائے۔

یہ بھی پڑھیں : غزہ جنگ کے دو سو پینتیسویں روز بھی مزاحمتی گروہوں کی کارروائیاں جاری

انہوں نے کہا کہ صہیونی حکومت ایک سرکش حکومت ہے جو عالمی قوانین کو پامال کرتی ہے۔ رفح میں فلسطینیوں کے قتل عام کی کوششیں ناکام ہوں گی۔

بدران نے مزید کہا کہ ہمیں مذاکرات کے حوالے سے کوئی تجویز نہیں ملی ہے۔ نیتن یاہو کی جانب سے مذاکرات کے بیانات دنیا کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کی سازش ہے۔

انہوں نے کہا کہ کسی بھی معاہدے سے پہلے غزہ کے خلاف جارحیت کا خاتمہ اور پناہ گزینوں کی واپسی ہماری بنیادی شرائط ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button