اہم پاکستانی خبریںہفتہ کی اہم خبریں

طالب علم سے جنسی زیادتی کرنے والامفتی عزیزالرحمن گرفتار

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) طالب علم کو 3 سال تک جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والامفتی عزیزالرحمن پنجاب پولیس کے ہاتھوں گرفتار ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب پولیس نے چھاپہ مار کاروائی کے دوران طالب علم سے جنسی زیادتی کرنے والے جمیعت علمائے اسلام کےمرکزی رہنما اور مولانا فضل الرحمن کے قریبی ساتھی مفتی عزیز الرحمن کو میانوالی سے جبکہ اس کے تینوں بیٹوں کو لاہور سے گرفتار کرلیا ہے۔

لاہور پولیس کے ترجمان عارف رانا کہ مطابق مفتی عزیز الرحمٰن، ان کے تین بیٹوں اور دو نامعلوم افراد کے خلاف 17 جون، 2021 کو ان کے طالب علم صابر شاہ نے تھانہ شمالی چھاؤنی لاہور میں ایف آئی آر درج کروائی تھی، جس کے بعد مفتی عزیز الرحمٰن میانوالی فرار ہو گئے تھے۔

یہ خبر بھی پڑھیں مفتی عزیز الرحمن کی بدفعلی کی نئی ویڈیوز منظر عام پر آگئیں

ایس ایس پی، سی آئی اے شعیب خرم جانباز نے صحافیوں کو بتایا کہ ’مفتی عزیز الرحمٰن اور ان کے تینوں بیٹوں کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ ان کے تینوں بیٹوں الطاف الرحمٰن، عتیق الرحمٰن اور عطا الرحمٰن کو سی آئی اے کی ٹیم نے ماڈل ٹاؤن اور کینٹ کے علاقوں سے گرفتار کیا گیا۔‘

طالب علم صابر کا کہنا ہے کہ انہوں نے جنسی زیادتی کے حوالے سےمدرسے میں بھی شکایت کی لیکن ان سے کہا گیا کہ ایسا نہیں ہوسکتا، جس سے مایوس ہو کر انہوں نے ویڈیوز بنانی شروع کیں اور وفاق المدارس العربیہ کے ناظم اعلیٰ مولانا حنیف جالندھری کو ثبوت کے طور پر بھیجیں جس کے بعد مفتی عزیز الرحمٰن نے انہیں مارنے کی دھمکی دی۔

اس کے بعد مدرسے کی انتظامیہ اور مہتمم نے تین جون، 2021 کو مفتی عزیزالرحمٰن کو برخاست کر دیا۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close