اہم پاکستانی خبریں

نااہلی کے خاتمہ سمیت اہم معاملات پر مفاہمت ہوگی، عالمی مصالحتکار فیصل محمد

شیعہ نیوز: سولہ سال قبل مغرب کی خواہش پر لندن میں پاکستانی سیاستدانوں کے درمیان ایک میثاق جمہوریت ہوا تھا جس کے تحت بڑی جماعتوں کو پابند کیا گیا تھا کہ وہ فوجی حکومت سے ڈیل نہیں کرینگی ایک دوسرے کے میڈیٹ کا احترام کرینگی اسی طرح کا ایک خاموش "مثاق مفاہمت” اب پاکستان میں بھی ہوا ہے اس بات کا اظہار بین الاقوامی تنازعات میں ثالثی کے ماہر محمد فیصل نے  پاکستان کی صورتحال پر تبصرہ کرتے ہوئے کہی. انھوں نے انکشاف کیا پاکستان میں نواز شریف کی نااہلی کا فیصلہ اسی "میثاق مفاہمت” کے پس منظر میں ہوا ہے, جس میں طے کیا گیا ہے پاکستان کی تمام سیاسی جماعتیں دو اہم نکات کی پاسداری کرینگی پہلا یہ کہ پاکستان میں جو "ہائبرڈ پلس ڈیموکریسی” سسٹم کو جاری رکھیں گی اور انتخابات کے نتائج میں ایک دوسرے کے مینڈیٹ کو تسلیم کرتے ہوئے مشترکہ قومی حکومت کے قیام پر بھی روکاوٹیں نہیں ڈالیں گی.

فیصل محمد کے مطابق عمران خان کا جو حال مغربی طاقتوں کی جانب سے مسلط کردہ ہائبرڈ پلس ڈیموکریسی سسٹم سے بغاوت کے نتیجہ میں ہوا ہے, اس کے بعد انھیں نہیں لگتا کہ کوئی سیاستدان دوبارہ اس ہاہبرڈ پلس سسٹم کے خلاف بغاوت کرنے کی کوشش کریگا, اس سوال کے جواب میں سائفر کیس میں انکی ضمانت کے بعد کیا عمران خان کی رہائی ہو جائیگی. انھوں نے کہا کہ ایسا ممکن نہیں سائفر کیس میں نرمی اس لیئے دی گئ ہے کہ عالمی طاقت نہیں چاہتی کہ عمران خان کو کسی بڑی سزا کی وجہ سے پاکستان میں عوامی ردعمل اس کے خلاف آئے لیہذا انھیں دوسرے مقدمات میں سزا دینے پر مفاہمت نظر آتی ہے۔ تاہم اگر انتخابات کے بعد اگر کوئی بڑا عوامی ردعمل آیا تو شاید انھیں ریلیف مل جائے ورنہ انکو سزا دینے کا فیصلہ ہو چکا ہے.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button