پاکستانی شیعہ خبریں

خیبر پختون خواہ:نو سال میں اٹھائیس سو پاکستانی دہشت گردی کا شکار،اکثریت شیعہ ہے

پاکستان کے شمال مغربی علاقوں اور بلخصوص صوبہ خیبر پختون خواہ میں گذشتہ نو برس میں اٹھائیس سو افراد دہشت گردی کا نشانہ بنے اور جام شہادت نوش کیا جبکہ اکثریت شیعیان اہل بیت علیہم السلام کی ہے۔شیعت نیوز کی مانیٹرنگ ڈیسک کی رپورٹ کے مطابق ایک سرکاری رپورٹ میں اس بات کا انکشاف کیا گیا ہے کہ گذشتہ نو برس میں پاکستان کے صوبہ خیبر پختون خواہ میں دہشت گردی کی وارداتوں میں نشانہ بننے والی اٹھائیس سو افراد میں سے بڑی اکثریت شیعہ افراد کی ہے جو طالبان دہشت گردوں کی دہشت گردی کانشانہ بنے اور شہید ہو گئے۔
آن لائن نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اس سرکاری رپورٹ صوبہ خیبر پختون خواہ کی صوبائی انتظامیہ نے جاری کی ہے۔
رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ طالبان دہشت گردوں کے حملوں کی زد میں آ کر سیکورٹی اہلکار،علمائے کرام،صحافی برادری،ڈاکٹرز،انجینئرز،وکلائ،اساتذہ،طلبائ،تاجر برادری سمیت سرکاری ملازمین شہید ہو ئے ہیں ،جبکہ ایک سو بیس فرنٹیئر کانسٹیبلری اہلکار،چار سو اکتالیس پولیس اہلکار،اور دو سو ستانوے پاک فوج کے اہلکار بھی طالبان دہشت گردو ں کی دہشت گردی کا نشانہ بنے ہیں۔
واضح رہے کہ طالبان دہشت گردوں کی سفاکانہ کاروائیوں میں جہاں اٹھائیس سو افراد شہید ہوئے ہیں وہاں سات ہزار پینتیس افراد ذخمی ہوئے ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button