پاکستانی شیعہ خبریں

شہدائے یوم علی کے قاتلوں فی الفور بے نقاب کر کے گرفتارکیا جائے

مجلس وحدت مسلمین ضلع لاہور کے زیر اہتمام شہدائے یوم علی کو خراج عقیدت پیش کرنے ،اور شہداء کے قاتلوں کی عدم گرفتاری کے خلاف ایک احتجاجی جلسہ منعقد کیا گیا جس میں ضلع بھر کے علمائے کرام اور شیعہ راہنمائوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی ، احتجای جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین ضلع لاہور کے سیکرٹری جنرل علامہ اقبال کامرانی نے کہا کہ شہدائے یوم علی کے قاتلوں اوران کی پشت پناہی کرنے والے عناصر کوفی الفور بے نقاب کر کے گرفتارکیا جائے ، انہوں نے کہا کہ آج ہم پر امن احتجاج کر رہے ہیں ،21 رمضان المبارک تک حکومتی ادارے میڈیا کے ذریعے قوم کو آگاہ کریں کہ سانحہ کربلا گامے شاہ کے ملزمان کی گرفتاری کے حوالے سے کیا پیش رفت کی گئی ہے ، بصورت دیگر شیعان حیدر کرار راست اقدام اٹھانے پر مجبور ہوں گے اور حالات کی خرابی کی تمام تر ذمہ داری حکومت اور حکومتی اداروں پر عائد ہو گی ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری تربیت علامہ ابو زر مہدوی نے کہا کہ شیعان علی کو پاکستان میں چن چن کر نشانہ بنایا جار ہا ہے اور حکومت و میڈیا خاموش ہے جس کی وجہ سے آج ہمین پر امن احتجاج کا راستہ اپنانا پڑا۔ انہوں نے حکومت ، حکومتی اداروں اور میڈیا کو انتباہ کیا کہ حقائق کو منظر عام پر لایا جائے ۔ اور وہ مجرم جنہیں حکومت پنجاب کی پشت پناہی حاصل ہے ، بے نقاب کیے جائیں ، انہوں نے مزید کہا کہ عدالت عالیہ جو چھوٹے چھوٹے واقعات پر تو از خود نوٹس لیتی ہے۔ شیعاں حیدر کرار کے قاتلوں کو رہا کر رہی ہے، انہوں نے کہا کہ حکومت اور عدلیہ کی جانب سے شیعان علی کے ساتھ روا رکھا جانے والا سوتیلی مان کا سلوک نا قابل برداشت ہے ، انہوں نے تمام سیاسی جماعتوں اور مذہبی و سماجی تنظیموں سے اپیل کی کہ وہ شیعاں علی پر ڈھائے جانے والے مظالم اور ان کی حق تلفیوں کا نوٹس لیں ۔ احتجاجی جلسے سے سابق مشیر وزیر اعظم حیدر علی مرزا، اور مجلس وحدت مسلمین کی شوریٰ عالی کے رکن علامہ مبارک موسوی نے بھی خطاب کیا ۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button