پاکستانی شیعہ خبریں

کوئٹہ میں جاری ٹارگٹ کلنگ حکومت، انتظامیہ اور قانون نافذ کرنیوالے اداروں کی غفلت کا نتیجہ ہے، علامہ ناصر عباس جعفری

raja nasirمجلس وحدت مسلمین کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ ناصر عباس جعفری نے کہا ہے کہ کوئٹہ کی مشکل قابل حل ہے اور ہم باہمی وحدت سے ہی اس مشکل کا مقابلہ کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ دشمن کوئٹہ میں ہونے والی شیعہ ٹارگٹ کلنگ کو علاقائی مسئلہ بنانا چاہتا ہے، لیکن مجلس وحدت مسلمین اس مسئلہ کو قومی ایشو بنا دے گی، آئے روز کی ٹارگٹ کلنگ اور دہشت گردی کے واقعات حکومت، انتظامیہ اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی غفلت کا نتیجہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر حکومت اور قانون نافذ کرنے والے ادارے تن دہی اور ایمانداری سے کام کرتے تو مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچایا جاسکتا ہے، لیکن جب ان اداروں میں کالی بھیڑیں موجود ہوں اور حکومتی وزراء اغوا برائے تاوان کی وارداتوں میں ملوث پائے جاتے ہوں تو ان سے کوئی امیدیں وابستہ رکھنا عبث ہے۔

علامہ ناصر عباس جعفری کا کہنا تھا کہ کوئٹہ کے شیعوں کی حفاظت دراصل پاکستان کی سلامتی کی حفاظت ہے۔ وفاقی حکومت یاد رکھے کہ اس کی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنے شہریوں کی حفاظت کرے، لیکن وہ نہ صرف اس فریضہ میں ناکام ہے بلکہ ان بڑھتے ہوئے واقعات سے چشم پوشی کر رہی ہے۔ آئندہ انتخاب میں شیعہ دشمنوں اور دہشتگردی کے واقعات پر چپ سادھنے والوں کو پارلیمنٹ میں نہیں پہنچنے دیں گے۔

سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلین نے کہا کہ ایم ڈبلیو ایم ملت کی امنگوں کی ترجمان ہے، انشاءاللہ ہم شہداء کے خون کو رائیگاں نہیں ہونے دیں گے اور اس مقدس خون سے وطن عزیز کی حفاظت کا فریضہ انجام دیں گے۔ نماز جمعہ کے اس اجتماع میں مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی راہنما علامہ شبیر بخاری، شوریٰ عالی کے رکن علامہ ہاشم موسوی، مولانا اقبال بہشتی، صوبائی سیکرٹری جنرل مولانا مقصود ڈومکی، مرکزی سیکرٹری سیاسیات ناصر عباس شیرازی اور دیگر ضلعی راہنما بھی موجود تھے۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button