پاکستانی شیعہ خبریں

حکومت ہمارا دفاع نہیں کرسکتی تو بتا دے، ہم اپنا دفاع کرنا جانتے ہیں، اطہر عمران طاہر

athar imranامامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے مرکزی صدر اطہر عمران نے مستونگ کے قریب زائرین پر ہونے والے دھماکے کی پرُزور مذمت کرتے ہوئے کہا کہ زائرین پر حملہ حکمرانوں کی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے، پاکستان کے ہر شہری کو تحفظ فراہم کرنا حکومت کا آئینی فریضہ ہے، لیکن حکومت اس میں بالکل بے بس دکھائی دیتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ زائرین پر دھماکہ کرنے والے تکفیری گروہ سے تعلق رکھتے ہیں، جن کا اسلام اور پاکستان سے کوئی تعلق نہیں، وہ درندہ صفت حیثیت کے مالک ہیں، جن میں انسانیت نام کی کوئی چیز نہیں۔

اطہر عمران نے کہا کہ یہ ملک دشمن عناصر اس ریاست کو غیر محفوظ بنانے کی کوشش کر رہے ہیں اور شیعہ مسلمانوں کو مسلسل کراچی سے لیکر کوئٹہ اور پاراچنار تک ٹارگٹ کر رہے ہیں، شیعہ مسلمانوں کو ان کی حب الوطنی کی سزا دی جا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر شیعہ ہونا اور وطن سے دوستی جرم ہے تو شیعہ نوجوان اس ارض پاکستان کے اپنی جان و جسم قربان کرنے کے تیار ہیں، اگر حکومت ہمارا دفاع نہیں کرسکتی تو ہمیں بتلا دے، ہم اپنا دفاع کرنا جانتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان ایک اسلامی ریاست کے نام سے معرض وجود میں آیا اور اس کا ہر شہری اپنے مسالک کے مطابق عبادت کرنے کا حق رکھتا ہے، ہم حکومت پاکستان کو یہ باور کراتے ہیں کہ وہ ان دشمن عناصر اور تکفیری گروہ کو لگام دے، اگر ان کو لگام نہ دی گئی تو ملک ٹکڑے ٹکڑے ہو جائے گا، ہم حکومت پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ زائرین کے راستے خصوصاً کوئٹہ سے تفتان بارڈر تک سکیورٹی دستے فراہم کرے، تاکہ زائرین کے تحفظ کو یقینی بنایا جائے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close