پاکستانی شیعہ خبریں

اسرائیل ایک ناجائز ریاست ہےعلی اکبر ولایتی

wilatiایران کے سابق وزیر خارجہ اور رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمٰی سید علی خامنہ ای کے سینئر مشیر ڈاکٹر علی اکبر ولایتی نے کہا ہے کہ گیس پائپ لائن میں پاکستان اور ایران کا اپنا مفاد وابستہ ہے۔ امریکہ سمیت کسی بھی دوسرے ملک کی مخالفت سے فرق نہیں پڑتا۔ لاہور کے مقامی ہوٹل میں ایرانی سفیر علی رضا حقیقیان اور قونصل جنرل بنی اسدی کے ہمراہ نیوز کانفرنس سے خطاب میں علی اکبر ولایتی نے میڈیا کے نمائندوں کے سوالات کے جوابات دیتے ہوئے کہا کہ پاک ایران گیس پائپ لائن کے خلاف مغربی میڈیا نے بڑا پراپیگنڈا جاری رکھا، مگر ہم نے بھی اس منصوبے پر کام جاری رکھا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی وفاقی کابینہ کی منظوری سے گیس پائپ لائن منصوبے کا آغاز ہوگیا ہے۔ اب اس سلسلے میں کوئی رکاوٹ نہیں آئے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ گیس پائپ لائن امن، استحکام اور خوشحالی کا منصوبہ ہے۔ اس سے کوئی جنگ نہیں ہوگی۔ پاکستانی بہادر ہیں، اپنی سرزمین پر پائپ لائن کی حفاظت کریں گے۔

ایک سوال کے جواب میں علی اکبر ولایتی نے کہا کہ گوادر پورٹ چین کو دینے پر ایران کو کوئی اعتراض نہیں۔ ہمیں پاکستان کی خوشحالی عزیز ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان سے ایران جانے والے زائرین کی حفاظت کے لئے وہ دعا گو ہیں۔ ہم لاہور سے مشہد جانے والی پروازوں کی تعداد میں اضافے پر غور کر رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ بہت جلد ای سی او ممالک کی پارلیمنٹ کے نمائندوں کا اجلاس ہوگا۔ رہبر معظم کے مشیر نے کہا کہ اسرائیل ایک ناجائز ریاست ہے، ہمیں اس سے کسی رعایت کی توقع ہے، نہ لیں گے۔ ایک سوال کے جواب میں سابق ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ ایران کے سعودی عرب سمیت تمام اسلامی ممالک سے اچھے تعلقات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پابندیاں ایران کا کچھ بھی نہیں بگاڑ سکتیں۔ ہم ایک خود مختار ملک ہیں۔ علی اکبر ولایتی نے کہا کہ پر امن مقاصد کے لئے نیوکلئیر ٹیکنالوجی کا حصول ایران کا حق ہے۔ اسے جنگ کے لئے استعمال نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ عالمی معائنہ کاروں کی نگرانی میں نیوکلیر پروگرام جاری ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button