پاکستانی شیعہ خبریں

جیل بھرو تحریک، علامہ مرزا یوسف حسین کی ساتھیوں سمیت گرفتاری و رہائی

mirza yousfآل پاکستان شیعہ ایکشن کمیٹی کی جانب سے گذشتہ دنوں رینجرز اور سکیورٹی اداروں کے ہاتھوں گرفتار اور لاپتہ ہونے والے بےگناہ شیعہ نوجوانوں کی گرفتاریوں کے خلاف نمائش چورنگی پر جیل بھرو تحریک کے آغاز کے موقع پر علامہ مرزا یوسف حسین نے اپنے 12 ساتھیوں کے ہمراہ گرفتاری دی، اس موقع پر صغیر عابد رضوی، علی اوسط اور سہیل مرزا سمیت مومنین کی کثیر تعداد بھی موجود تھی۔ گرفتاری کے موقع پر پولیس کے جانب سے شرکاء پر فائرنگ اور شیلنگ بھی کی گئی تاہم اس سے تمام افراد محفوظ رہے۔ بعد ازاں علامہ مرزا یوسف حسین کی گرفتاری کے بعد مجمع کے منتشر ہونے کے بعد علامہ مرزا یوسف حسین کو ساتھیوں کے ہمراہ سی بریز چوک پر رہا کردیا۔ پولیس نے رہائی کا عذر یہ پیش کیا ہے کہ ان کے پاس علامہ صاحب کو گرفتار کرنے کے احکامات نہیں ہیں۔ تاہم رہا ہونے والے 12 افراد میں سے حیدرآباد سے تعلق رکھنے والے عالم دین علامہ ناظم حسین تاحال لاپتہ ہیں۔

اس موقع پر نمائندے سے گفتگو کرتے ہوئے آل پاکستان شیعہ ایکشن کمیٹی کے مرکزی رہنما رضی حیدر کا کہنا ہے کہ پولیس، رینجرز اور سیکورٹی اداروں کی جانب سے مسلسل شیعہ قوم کے نوجوانوں کو بلاجواز گرفتار کرنے کا سلسلہ جاری ہے، احتجاج ہمارا حق ہے لیکن لگتا ہے کہ سیکورٹی اداروں میں شامل بعض کالی بھیڑوں کو ہمارا اپنا حق مانگنا بھی پسند نہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ آج پولیس نے بھی یہ ثبوت دیا ہے کہ وہ بھی رینجرز کے اس ظالمانہ اقدام میں برابر کی شریک ہے، اگر ہمارے بے گناہوں نوجوانوں کو رہا نہیں کیا گیا تو راست اقدام پر مجبور ہوں گے۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button