پاکستانی شیعہ خبریں

حکومت مصر شیخ حسین شحاتہ اور دیگر شہداء کے خون میں رنگے ہاتھوں کو کیفرکردار تک پہنچائے، علامہ ناصر عباس جعفری

مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ ناصر عباس جعفری نے اپنے مذمتی بیان میں کہا ہے کہ ان دنوں جبکہ پورا عالم اسلام پندرہ شعبان کی مناسبت سے ولادت باسعادت منجی عالم بشریت حضرت امام مہدی (عج) اور شب برات کا جشن منا رہا ہے اور مسلمان دعا و مناجات میں مصروف ہیں، دوسری جانب مصر سے موصولہ اطلاعات کے مطابق ایک ایسی ہی دعائیہ تقریب میں تکفیری سوچ کے حامل چند افراد نے حملہ کرکے معروف مصری عالم دین شیخ حسین شحاتہ اور چند دیگر شیعہ مسلمانوں کو شہید کر دیا ہے۔

علامہ ناصر عباس جعفری نے اپنے بیانیہ میں مزید کہا ہے کہ ہم جانتے ہیں مصری معاشرہ عالم اسلام میں اپنی اعتدال پسندی اور مذہبی ہم آہنگی کے سبب مشہور ہے، لیکن جب سے تکفیری سوچ کو یہاں نسبی آزادی ملی ہے وہ اپنے صیہونی عالمی ایجنڈے کی تکمیل کے لئے انہی جرائم کا ارتکاب کر رہے ہیں جو دیگر اسلامی ممالک میں وہ انجام دے رہے ہیں۔ ہم مصری حکومت اور مربوط اداروں سے پر زور مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ اس قسم کے غیر اسلامی اور غیر انسانی افعال کی روک تھام کرے اور شیخ حسین شحاتہ اور دیگر شہداء کے خون میں رنگے ہاتھوں کو کیفر کردار تک پہنچائے۔

انہوں نے کہا ہے کہ ہمیں امید ہے کہ عالم اسلام میں خاص اہمیت کی حامل دینی درسگاہ جامعہ الازھر اس سلسلے میں گذشتہ کی طرح امت مسلمہ میں بھائی چارگی اور ہم آہنگی کے فروغ کے لئے اپنی خدمات جاری رکھتے ہوئے تکفیری فتنے کی روک تھام کے لئے اقدامات انجام دے گی، جو کہ امت کے درمیان فتنے کا باعث بن رہے ہیں، انہوں نے کہا ہے کہ ہم ان بے گناہ افراد کے قتل کی پرزور مذمت کرتے ہوئے دست بدعا ہیں کہ اللہ تعالٰی امت مسلمہ کو تمام فتنوں سے محفوظ رکھے، اپنے بیانیہ کے آخر میں انہوں نے شیخ حسین شحاتہ اور دیگر شہداء کی شہادت پر ان عزیز شہیدوں کے خانوادوں اور مصری عوام کی خدمت میں تعزیت پیش کی ہے۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button