پاکستانی شیعہ خبریں

حکومت پنجاب قیام امن میں مخلص ہے تو رانا ثناءاللہ کو وزارت سے ہٹا دیا جائے، ایم ڈبلیو ایم

مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ امین شہیدی اور سیکرٹری جنرل پنجاب علامہ عبدالخالق اسدی نے بھکر میں گذشتہ روز دہشت گردوں کی فائرنگ سے جاں بحق شہداء کے جنازوں میں شرکت کی۔ کوٹلہ جام میں شہید کی نماز جنازہ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے علامہ امین شہیدی نے کہا کہ پنجاب میں فرقہ وارانہ کشیدگی کا سبب اس وقت پنجاب حکومت اور اس کی کابینہ میں شامل حکومتی وزیر رانا ثناءاللہ ہے، جو درحقیقت دہشت گرد گروپوں کی سرپرستی میں ملوث ہے، کالعدم مسلح دہشت گردوں نے پولیس کی سرپرستی میں شیعہ آبادی پر حملہ کرکے نہتے لوگوں کے خون سے ہولی کھیلی اور بھکر پولیس دہشت گرودں کی معاونت کرتی رہی۔

انہوں نے مزید کہا کہ ستم ظریفی یہ ہے کہ رانا ثناء اللہ اور پنجاب حکومت کے ایماء پر ڈی پی او سرفراز فلکی اپنی نااہلی چھپانے کیلئے بے گناہ عوام کو ہراساں کر رہا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ ڈی پی او سرفراز فلکی کو برطرف کیا جائے اور واقعے کی ایف آئی آر ڈی پی او کے خلاف درج کی جائے، جو علاقے میں کالعدم جماعت کے دہشت گردوں کا سرپرست بنا ہوا ہے۔ رانا ثناء اللہ اپنے گذشتہ دور کے ایجنڈوں کی تکمیل چاہتا ہے، پنجاب حکومت اس وقت مکمل طور پر دہشت گردوں کے ہاتھوں یرغمال بن چکی ہے، وفاقی حکومت اگر قیام امن میں مخلص ہے تو وہ رانا ثناء اللہ کو وزرات سے برطرف کرکے پنجاب کو تباہی سے بچائے۔

علامہ امین شہیدی نے اپنے خطاب میں عوام سے پرامن رہنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ بھکر میں ڈی آئی خان اور دیگر قبائلی علاقوں سے ہجرت کرکے آئے ہوئے دہشت گرد علاقے کے امن کیلئے سب سے بڑا خطرہ ہیں، اگر علاقے میں حکومت امن کی بحالی کیلئے مخلص ہے تو ان دہشت گردوں کو واپس اپنے علاقوں میں بھیجا جائے، تاکہ یہاں کے عوام امن اور سکھ چین کی زندگی گزار سکیں۔ یاد رہے کہ مجلس وحدت مسلمین واقعے کیخلاف 3 روزہ سوگ کا اعلان پہلے ہی کرچکی ہے جبکہ کل بروز اتوار 25 اگست کو بھکر دہشت گردی کیخلاف بھرپور احتجاج کیا جائیگا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button