مضامین

وہابی دہشت گردوں تم کب سے مزارات کے ماننے والے ہو گئے؟

حضرت خالد بن ولید(رض) کے مزار کے علاقے میں آپریشن کافی عرصے سے جاری ہے اور سلفی تکفیری مزار پر قابض ہیں، مگر ابھی مزار کو مورچے کے طور پر استعمال کر رہے ہیں_ القاعدہ کے وہابی دہشت گردوں نے جن کی مدد پاکستان سے گئے ہوۓ طالبان اور سپاہ صحابہ کے تکفیری دیوبندی کر رہے تھے حضرت خالد بن ولید کے مزار کے سنی صوفی متولی یا گدی نشین کو شہید کر دیا اور مزار کو شامی فوج کے خلاف اسلحہ کے ڈپو کے طور پر استعمال کیا – شامی فوج کے خصوصی کمانڈوز کاروائی کر رہے ہیں اور انکی کوشش ہے کہ مزار میں موجود خودکش بمباروں کو بم چلانے سے پہلے ہلاک کر دیں_ یاد رہے کہ سلفی وہابی اور دیوبندی عقائد کے مطابق مزار بنانا اور مزاروں کی زیارت کرنا شرک اور بت پرستی کے مترادف ہے سلفی تکفیری مزار کو شرک کی علامت سمجھتے ہیں اور چاہتے ہیں کہ مدینہ میں جنت البقیع میں اہل بیت اور صحابہ کے مزارات کی طرح سیدہ زینب(س) اور حضرت خالد(رض) کے مزارات کو مسمار کر دیں_ اس سے پہلے حضرت حجر(رض) اور حضرت عمار بن یاسر (رض) کی قبر مبارک کی توہین کی جا چکی ہے، شامی فوج کے سنی اور شیعہ جانبازوں کو دعاؤں کی سخت ضرورت ہے
بی بی زینبؑ کے مزار کی توہین پر خاموش رہنے والے تکفیری جو خالد بن ولید کے مزار کا رونا رو رہے ہیں ان سے ایک سوال ؟
تم لوگ کب سے مزارات کے ماننے والے ہو گئے؟ تمہارے نزدیک تو یہ شرک اور بدعت ہے نا؟ تمہارے نزدیک تو اس کو گرانا بڑا اجر و ثواب تھا نا؟ اگر کسی نے اس شرک کے اڈے کو گرا دیا تو کیا درست نہیں کیا؟
یاد رکھیں : اگر بشار الاسد کو خالد بن ولد کا مزار گرانا ہوتا تو بشار اپنی حکومت کی طاقت کی بنا پر پہلے د ن ہی اس کو اسی طرح گراد دیتا جس طرح سعودیوں نے جنت البقیع میں اہل بیت ؑ اور صحابہ ؓ کے مزارات گرا ڈالے
کچھ لوگ زیادہ ہی سیانے بن کر کہہ رہے ہیں کہ شام میں شامی فوج حضرت خالد بن ولید(رض) کے مزار پر حملے کررہی ہے_ اگر شامی حکومت نے یہ کرنا ہوتا تو اس مزار کو بنواتی ہی کیوں؟ اس کی باقاعد ہ تزئین اور دیکھ بھال کیوں کرتی ؟ تمھارے سلفی تکفیری دہشتگرد جو ادھر پناہ لیے بیٹھے ہیں، ان پر بم کیوں نہیں برسا رہی؟ سلفی تکفیری نے اس مقدس مقام کی آڑ کس امید پر لے رکھی ہے؟ شامی فوج کے سنی شیعہ کمانڈوز، اتنے دنوں سے اپنی جانیں دے رہے ہیں مگر مزار کو محفوظ رکھے ہوۓ ہیں، جب کہ یزیدی پیروکاروں نے اس سے پہلے جنت البقیع اور پھر پاکستان میں کئی مزارات پر حملے کیے ہیں۔۔۔۔۔۔۔کشمیر میں درگاہِ حضرت ’’بل‘‘ کو بھی شہید کیا اور اس کا نام انڈین آرمی کا لگادیا۔۔۔۔۔۔۔اور آج شام میں بھی سلفی تکفیری گروہ یہی کررہاہے_ کون نہیں جانتا کہ توحید کے نام پر امریکا سے لڑنے کے بجاۓ قبروں پر چڑھائی کون کرتا رہا ہے؟ سیدہ فاطمہ(س)، سیدہ آمنہ(س)، سیدہ خدیجہ(س)، سیدہ عائشہ(رض)، سیدہ ام سلمہ(رض)، اور اسی طرح حضرت حمزہ(رض)، حضرت عباس بن عبد المطلب(رض)، حضرت عثمان(رض)، اور دیگر بزرگان کے مزارات کو کس نے تباہ کیا
شام پر حملہ کرنے والے دہشتگرد مسلمانوں کو شامی حکومت کی مدد سے باز رکھنے کیلئے مسلسل سنی لبادہ اوڑھے ہوۓ ہیں جبکہ سب جانتے ہیں کہ یہ سلفی ٹولہ اہلسنت کو مشرک سمجھتا ہے اور شام کے سنی مفتی اعظم کی مسجد میں خودکش حملہ کر کہ انھیں شہید کرنے جیسے ہزاروں جرائم کا مرتکب ہوا ہے_ یہ دیکھیں غیر ملکی غنڈے شامی سنیوں کو کس طرح قتل کر رہے ہیں:-

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button