پاکستانی شیعہ خبریں

کراچی:جامعہ کراچی دھماکے میں ملوث ناصبی دہشت گرد گرفتار

جامعہ کراچی میں دو ہفتے قبل ہونے والے دھماکے کے بعد اسپیشل انوسٹی گیشن یونٹ اور حساس اداروں نے کاروائی کرتے ہوئے دھماکے میں ملوث کالعدم دہشت گرد تنظیموں کے تین کارکنوں کو گرفتار کر لیا ہے۔شیعت نیوز کے نمائندے کی رپورٹ کے مطابق اسپیشل انوسٹی گیشن یونٹ نے جامعہ کراچی میں امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے کارکنوں پر دوران نماز ہونے والے بم دھماکے میں ملوث تین خطر ناک دہشت گردوںمحمد عمر ولد  میجر اسلم چوہدری،(طالب علم شعبہ فوڈ اینڈ سائنس)،حفیظ اللہ ولد نعمت اللہ (طالب علم شعبہ بین الاقوامی تعلقات،سال اول)اور محمد فیض جو کہ جامعہ کراچی کا طالب ریگولر طالب علم نہیں ہے کو گرفتار کر لیا ہے اور مبینہ ٹاؤن تھانے کے حوالے کر دیا ہے جہاں ان سے تفتیش جاری ہے۔
واضح رہے کہ 28دسمبر 2010ء کو جامعہ کراچی میں مین کیفے ٹیریا کے ساتھ دھماکہ اس وقت ہوا جب امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے کارکنان نماز ظہرین کی ادائیگی کے لئے صفوں پر موجود تھے کہ پہلے سے صفوں کے ساتھ نصب کیا گیا ایک بم زور دار دھماکے سے پھٹ گیا جس کے نتیجہ میں چار طالب علم شدید ذخمی ہوئے تھے جن میں سے دو کی حالت تا حال نازک بتائی جا رہی ہے۔
پولیس ذرائع کاکہناہے کہ گرفتار کئے گئے تینوں ناصبی دہشت گردوں کا تعلق ایک مذہبی دہشت گرد طلباء تنظیم سے ہے ۔یہ بات قابل غور ہے کہ تین دہشت گردوں میں سے ایک حفیظ اللہ ولد نعمت اللہ کا بڑا بھائی جو کہ خود بھی ایک مذہبی دہشت گرد طلباء تنظیم کا کارکن تھا ،چھ ماہ قبل وزیرستان میں ایک ڈرون حملے میں ہلاک ہوا تھا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button