Uncategorized

وہ شہدا جونام نہاد مذاکرات کے دوران شہید ہوئے اس کی ایف آئی آر طالبان حامی و مذاکرات حامی قوتوں کے خلاف درج کی جائے۔علامہ عبدا خالق اسدی

شیعہ نیوز(لاہور)مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے سیکرٹری جنرل علامہ عبدا خالق اسدی  نے دہشت گردوں کے ہاتھوں 23 سیکیورٹی فورسز کے نو جوانوں کی شہادت پر شدید غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے اس قومی سانحے کی  پر زورمذمت کی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ مذاکرات کے نام پر پاکستان کی سلا متی کے ساتھ گھناونے کھیل کا آغاز کرکے قومی سلامتی کو مجروح کیا جا رہا ہے۔شہداء سکیورٹی فورسز اور دیگر شہداء جو نام نہاد مذاکرات کے دوران شہید ہوئے اس کی ایف آئی آر طالبان حامی و مذاکرات حامی قوتوں کے خلاف درج کی جائے۔علامہ عبدا خالق اسدی  کا کہنا تھا کہ ہم شروع دن سے اس بات کا اعلان کر رہے تھے کہ ان وحشی درندوں سے مذاکرات پاکستانی آئین  اور اسلامی قوانین کی خلاف ورزی اور شیطان سے مذاکرات کے مترادف ہے۔طالبان پاکستان کے خلاف قوتوں اور ملک دشمن عناصر کی کٹھ پتلی گروہ ہیں ۔وہ کبھی بھی پاکستان کے حامی و ہمدرد نہیں ہو سکتے۔ملک بھر میں ان دہشت گردوں کا ٹھکانہ اور  نرسریاں نام نہاد اسلامی وہ مدارس ہیں جو ملک کے طول و عرض میں پھیلا ہوا ہے۔ان کے خلاف کریک ڈاون کرنا اور قانون کے گرفت میں لینا ناگزیر ہو چکا ہے علامہ اسدی کا مزید کہنا تھا کہ ریاست کے باغیوں کی سر کوبی کے لئے فی الفور ان درندوں کے خلاف کاروائی شروع کی جائے۔مذاکرات کے نام پر ان دہشت گردوں کو دوبارہ منظم کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ہم کسی صورت بھی اپنے مادر وطن کو ان درندوں کے ہاتھوں یرغمال نہیں ہونے دیں گے۔
Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button