مشرق وسطی

تکفیری دہشت گردوں کے حملے میں 6 شامی باشندے شہید

صوبہ حماہ کے شہر السلمیہ کے علاقے وادی العرب میں داعشی دہشت گرد عناصر کی دہشت گردانہ کارروائی کے نتیجے میں 6 شامی باشندے جاں بحق اور متعدد زخمی ہوئے۔

گزشتہ بدھ کو بھی دیرالزور کی شاہراہ پر داعش دہشت گردوں نے ایک مسافر بس کو نشانہ بنایا تھا جس کے نتیجے میں بس میں سوار 28 افراد جاں بحق اور 8 زخمی ہوئے تھے۔

اگرچہ شام میں دہشت گردوں کا اب کسی بھی علاقے پر قبضہ نہیں ہے لیکن اس کے باوجود اس گروہ کے بعض عناصر مختلف علاقوں میں روپوش ہیں اور موقع ملنے پر وہ دہشت گردانہ حملہ کر تے ہیں تاہم شامی فوج اپنے ملک کے مختلف علاقوں سے ان باقی ماندہ دہشت گردوں کا بھی صفایا کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔

یاد رہے کہ دو ہزار گیارہ میں امریکہ اور سعودی عرب کے حمایت یافتہ دہشت گردوں نے شام میں سکیورٹی بحران کو ہوا دی تاہم شامی فوج نے ایران، استقامتی محاذ اور روس کی مدد سے خونخوار دہشت گردوں منجملہ تکفیری ٹولے داعش کوشکست دی، تاہم اب بھی شام کے بعض علاقوں میں امریکہ، سعودی عرب اور ترکی کے حمایت یافتہ دہشت گرد عناصر سرگرم عمل ہیں۔

اس بحران کا مقصد علاقے میں طاقت کا توازن صیہونی حکومت کے حق میں موڑنا تھا لیکن شامی عوام حکومت اور فوج نے اپنی بے مثال استقامت کے ذریعے داعش کو شکست دی اور باقی بچے عناصر کا بھی خاتمہ کیا جارہا ہے۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close