اسلامی تحریکیںپاکستانی شیعہ خبریںہفتہ کی اہم خبریں

شیعہ علماء کونسل کی ڈیڈلائن کام کرگئی، علامہ فضل عباس قمی بخیریت گھر واپس پہنچ گئے

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) 18 روز قبل لاپتہ ہونیوالےمسجد مصطفیٰ کے امام، مدرسہ مدینۃ العلم کے پرنسپل اور شیعہ علماء کونسل کے رہنما علامہ فضل عباس قمی بخیریت واپس گھر پہنچ گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق علامہ فضل عباس قمی جو کہ مسجد مصطفیٰ کے امام اور مدرسہ مدینۃ العلم کے پرنسپل ہیں، کو 18 روز قبل قانون نافذ کرنیوالے اداروں نے گھر سے حراست میں لے کر نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا تھا۔ لاپتہ ہونے والے علامہ فضل عباس قمی کی بازیابی کیلئے شیعہ علماء کونسل کے قائدین حافظ کاظم رضا نقوی سمیت دیگر نے حکومت کو ڈیڈ لائن تھی۔ ڈیڈ لائن کے ختم ہوتے ہی علامہ فضل عباس قمی واپس اپنے گھر پہنچ گئے ہیں۔

یہ خبر بھی پڑھیں شیعہ جبری گمشدگیاں جاری، ایک اور شیعہ عالم دین کو اغوا کرکے لاپتہ کردیا گیا

علامہ فضل عباس قمی کی بازیابی پر حافظ کاظم رضا نقوی نے کہا کہ حکومتی ادارے اپنے قوانین کو مدنظر رکھیں، کسی کو ماورائے عدالت لاپتہ کرنا اداروں کی ساکھ کو نقصان پہنچا رہا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ حکومت نے وفاق المدارس کیساتھ طے کیا تھا کہ اگر کسی مدرسے کے حوالے سے تحفظات ہوں گے تو حکومت پہلے وفاق کو آگاہ کرے گی، اس کے بعد مدرسے یا عالم دین کیخلاف کارروائی ہوگی، مگر اس معاملے میں حکومت نے وفاق المدارس کو اعتماد میں لئے بغیر انہیں حراست میں لے کر اپنے ہی وعدہ کی خلاف ورزی کی تھی۔

انہوں نے کہا کہ اب اداروں سے یہی کہتے ہیں کہ وہ محتاط رہیں اور بے گناہ کو بلاوجہ ہراساں نہ کریں۔ حافظ کاظم کا کہنا تھا کہ ملت جعفریہ پاکستان محب وطن قوم ہے، پاکستان بنایا بھی ہم نے تھا اور اس کے تحفظ کیلئے قربانیاں بھی ہم نے دی ہیں، ایسے اقدامات ملت میں اداروں کے حوالے اچھی رائے پیدا نہیں کر رہے۔

 

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button