مشرق وسطیہفتہ کی اہم خبریں

آل خلیفہ کی جابرانہ پالیسیوں کے خلاف بحرینی عوام ایک دفعہ پھر سراپا احتجاج

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) آل خلیفہ کی جابرانہ پالیسیوں کے خلاف اور قیدیوں کی رہائی کے لئے بحرینی عوام نے ایک بار پھر مظاہرہ کر کے اس ملک کے سیاسی قیدیوں کی رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔

ارنا کی رپورٹ کے مطابق بحرین کے عوام نے السنابس شہر میں بحرینی قیدیوں خاص طور سے عبدالجلیل السنیکس کی فوری رہائی کیلئے ایک بار پھر احتجاجی اجتماع منعقد کر کے احتجاجی مظاہرہ کیا۔

بحرینی مظاہرین اپنے ہاتھوں میں پلے کارڈز اٹھائے ہوئے تھے جن میں قیدیوں کی رہائی تک سڑکوں پر مارچ کرنے اور عبدالجلیل السنیکس سمیت دیگر سیاسی قیدیوں کی رہائی کا مطالبہ کیا گیا تھا ۔

اس سے 2 روز قبل بھی بحرینی عوام نے سیاسی قیدیوں کی رہائی کیلئے مظاہرہ کیا تھا اور دھرنا دیا تھا۔ احتجاجی دھرنے میں شریک بحرین کے انسانی حقوق کے سرگرم رہنما ابتسام صایغ کا کہنا تھا کہ عبدالجلیل السنیکس نے گزشتہ 144 دنوں سے بھوک ہڑتال کی جس کی وجہ سے ان کی حالت تشویشناک ہو گئی ہے۔ لیکن اس کے باوجود ابھی تک آل خلیفہ کی حکومت اس مقدمے کی سماعت کرنے کی اجازت نہیں دے رہی ہے۔

واضح رہے کہ ڈاکٹر عبدالجلیل السنیکس بحرین کی یونیورسٹی کے پروفیسر اور انسانی حقوق کے سرگرم رہنما ہیں انھیں 2011 میں آل خلیفہ کی حکومت کو سرنگوں کرنے کیلئے ہونے والے مظاہروں میں شرکت کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا اور انھیں عمر قید کی سزا دی گئی۔

بحرین میں چودہ فروری دوہزار گیارہ سے اپنے بنیادی حقوق کے حصول کے لئے موروثی آل خلیفہ حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہرے ہو رہے ہیں تاہم آل سعود اور بعض مغربی ممالک کی حمایت یافتہ آل خلیفہ حکومت اپنے ہی عوام کی بہیمانہ سرکوبی پر کمربستہ ہے۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button