اسلامی تحریکیںپاکستانی شیعہ خبریںہفتہ کی اہم خبریں

چہلم امام حسینؑ کا جلوس اپنے قدیمی راستے سے نکالنے کا اعلان

ملت جعفریہ کی تمام جماعتوں نے چہلم امام حسینؑ کا مرکزی جلوس اپنے قدیمی راستے سے نکالنے کا اعلان کردیا

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) ملت جعفریہ کی تمام جماعتوں اور اداروں کی ایک اہم میٹنگ گزشتہ روزمنعقد ہوئی جس میں اس بات پر متفقہ فیصلہ کیا گیا کہ کراچی میں چہلم امام حسین ؑ کا مرکزی جلوس اپنے قدیمی روٹ پر ہی نکالا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق جعفریہ الائنس پاکستان کی جانب سے ایک اجلاس بارگاہ حسینی بلاک 2 پی ای سی ایچ سوسائٹی میں منعقد ہوا جس میں مرکزی تنظیم عزاء، امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن، ہئیت آئمہ مساجد امامیہ، مرکزی تنظیم عزاداری ، امامیہ آرگنائزیشن، مجلس ذاکرین امامیہ، انجمن امامیہ، ابو طالب فاؤنڈیشن، ناصران امام، شیعہ علماء کونسل، مجلس وحدت المسلمین، پاسبان عزاء، سفینتہ المومنین ٹرسٹ مارٹن روڈ، پاک محرم ایسوسی ایشن، انجمن سادات امروہہ، ایم ای ایس او، اے ایچ آئ او ، تمام اسکاؤٹس گروپس اور جعفریہ الائنس میں شامل مقتدر شخصیات اور کمشنر کراچی کے نامزد کردہ کراچی کے تمام ڈسٹرکٹ کےفوکل پرسنز نے شرکت کی۔

اجلاس میںتمام جماعتوں میں متفقہ طور پر اس بات کا فیصلہ کیا کہ چہلم امام حسین علیہ السلام کا مرکزی جلوس اپنی قدیمی گزر گاہ نمائش براستہ ایم اے جناح روڈ سے جائے گا۔

اس کے علاوہ مندرجہ ذیل نکات پر بھی اتفاق کیا گیا:
وفاقی حکومت اور صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا گیا کہ گرین لائن پراجیکٹ کو جلد از جلد مکمل کیا جائے اور جلوس کے راستوں میں حائل رکاوٹوں کو ہٹانے کا جلد سدباب کیا جائے۔
وفاقی حکومت عراقی حکومت سے فی الفور رابطہ کرے تاکہ چہلم امام حسین علیہ السلام کے لیے کربلا جانے والے زائرین کو درپیش مسائل کو حل کیا جائے۔
ان ایام عزا میں اندرون سندھ جو بھی ایف آئی آرز درج کی گئی ہیں انہیں فوری طور پر واپس لیا جائے۔
صوبائی سیکریٹری تعلیم کی طرف سے ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ میں کام کرنے والے مومنین ( جو کہ زیارت کے خواہشمند تھے) کی ایکس پاکستان لیو کو ختم کرنے کی بھرپور مذمت کی گئی اور حکومت سندھ سے مطالبہ کیا گیا کہ اس فیصلے کو فوراً واپس لیا جائے تاکہ مومنین میں پائی جانے والی بے چینی کا خاتمہ کیا جا سکے۔

آخر میں جعفریہ الائنس کے جنرل سیکرٹری سید سلمان مجتبی نقوی صاحب کے لیے دعائے صحت کی گئی اور علامہ ڈاکٹر عباس کمیلی کے لیے فاتحہ خوانی کی گئی۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button