دنیا

کورونا سے نمٹنے کے لئے عالمی سطح پر جنگ بندی کی جائے۔ انٹونیو گوٹیرش

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل نے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ مسلحانہ تصادم اور جنگ کے شکار علاقے وہ علاقے ہیں جنہیں کورونا وائرس کے نتیجے میں جانی نقصان کا زیادہ خطرہ ہے۔

اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انٹونیو گوٹیرش نے دنیا کو خبردار کرتے ہوئے کہا کہ اگر کورونا کو لگام لگانے کے لئے عالمی سطح پر بالخصوص نادار ممالک میں اتحاد و ہمدلی پیدا نہ ہوئی تو دسیوں لاکھ لوگوں کی زندگی خطرے میں پڑ جائے گی۔

واضح رہے کہ کووڈ نائینٹین نامی اس مہلک وائرس کے پھیلاؤ کا آغاز دوہزار انیس کے آخر میں ہوا اور اس وقت یہ وبا دنیا کے ایک سو پچانوے سے زائد ممالک میں سرایت کر چکی ہے جس میں اب تک تین لاکھ اٹھہتر ہزار سے زائد افراد مبتلا ہو چکے ہیں۔ مبتلا افراد میں سے تقریبا ایک لاکھ افراد صحت یاب ہو چکے ہیں جبکہ سولہ ہزار سے زائد بیماروں کو اپنی جان سے ہاتھ دھونا پڑا۔

قابل ذکر ہے کہ ایران میں اب تک تیئیس ہزار افراد اس وبائی بیماری کا شکار ہوئے ہیں جن میں سے آٹھ ہزار تین سو سے زائد صحت یاب ہو کر اسپتال سے گھر لوٹ چکے ہیں اورایران کی کل ساڑھے آٹھ کروڑ کی آبادی میں سے چار کروڑ سے زائد افراد کی اسکریننگ مکمل ہو چکی ہے اورایران میں جنگی پیمانے پر کورونا کے خلاف مہم جاری ہے جس میں ڈاکٹروں، نرسوں اور طبی عملے کے علاوہ، رضاکار فورس بسیج اور مسلح افواج سمیت مختلف عوامی طبقے شریک ہیں۔

Tags
Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close