مشرق وسطی

نیتن یاھو اسرائیل میں صیہونی نسل پرستی کے بیج بو رہے ہیں

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) Kess عرب اتحاد کا کہنا ہے کہ نیتن یاھو ملک میں انتہا پسندی اور نسل پرستی کے بیج بو رہے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق کنیسٹ میں عرب ارکان پارلیمنٹ کے سیاسی اتحاد کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ صیہونی حکومت فلسطینیوں‌ کی جان ومال پر ہونے والے یہودی حملوں کی سرکاری سطح پر سرپرستی کررہی ہے۔ اسرائیلی حکومت اور وزیراعظم نیتن یاھو کی یہ پالیسی انتہا پسندی اور نسل پرستی کے بیج بونے کے مترادف ہے۔

بیان میں عرب اتحاد نے صیہونی آباد انتہا پسندوں کی طرف سے القدس میں الحبش کے مقام پر فلسطینیوں پر کیے گئے بزدلانہ حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ یہودی آباد کاروں کی طرف سے فلسطینی شہریوں کی جان ومال پرحملوں کے ساتھ ساتھ فلسطینی مسلمانوں اور عیسائیوں کی عبادت گاہوں، مساجد اور گرجا گھروں‌ کو بھی حملوں کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ اسرائیلی ریاست اس پر خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔ اسرائیلی ریاست کی منظم پالیسی اور حکمت عملی سے ملک میں انتہا پسندی اور نسل پرستی کو فروغ مل رہا ہے۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز شمالی فلسطین کے علاقے الحبش میں صیہونی آباد کاروں‌ نے ایک مسجد اور فلسطینی شہریوں کے گھروں کی بیرونی دیواروں پر نسل پرستانہ نعروں کی چاکنگ کے ساتھ ساتھ فلسطینیوں کی املاک پربھی حملے کیے گئے۔ متعدد فلسطینیوں کے گھروں پر سنگ باری کی گئی اور گاڑیوں کو بھی نقصان پہنچایا گیا۔

فلسطینی علاقوں میں صیہونی آباد کاروں اور انتہا پسند یہودیوں کے حملوں کا یہ پہلا واقعہ نہیں بلکہ اس طرح کے واقعات روز کا معمول بن چکے ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button