پاکستانی شیعہ خبریںہفتہ کی اہم خبریں

پاکستان کا غیر مستحکم ہونا پورے خطے کیلئے نقصان دہ ہے،علامہ راجہ ناصر

شیعہ نیوز: مجلس وحدت مسلمین پاکستان اور ملی یکجہتی کونسل کے زیر اہتمام رحمت اللعالمینؐ وحدت کانفرنس کا انعقاد اسلام آباد کے مقامی ہوٹل میں ہواجس سے خطاب کرتے ہوئےمجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصرعباس جعفری نےکہاکہ نبی اکرم حضرت محمد مصطفی ؐ کی آمد سب سے بڑی عید ہے، حضور اکرم ص کی ذات تمام کائنات پر تصرف رکھتی ہے اسی لئے آپ رحمت للعالمین ہیں، ہم خوش قسمت ہیں کہ خدا نے ہمیں ایسے نبی کی امت بنایا جو سیرت اور اخلاق میں سب سے برتر ہیں،ملی یکجہتی کونسل واحد پلیٹ فارم ہے جس میں تمام مکاتب فکر کے لوگ موجود ہیں،ملی یکجہتی کونسل کے پلیٹ فورم سے سیرت النبیؐ پر تحقیقی کانفرنس کا انعقاد کریں گے۔

فرانس کے حوالے سے مقررین کے موقف کی تائید اور ملی یکجہتی کونسل کے کردارکی تعریف کرتے ہوئے اتحاد امت کے لیے بھرپورتعاون کی یقین دہانی کرائی۔انہوں نے کہا کہ ہمارا خطہ اس وقت بہت حساس مرحلے سے گزر رہا ہے۔دنیا پرلبرل ورلڈ آرڈرکا نظام نافذہے،جنوبی ایشیا میں طاقت کے توازن کی منتقلی روکنے کے لئے یورپ اور امریکہ سر توڑ کوشش کر رہے ہیں۔یہ دور امریکہ کی شکست کا دور ہے ،افغانستان سمیت دوسرے حصوں میں امریکہ کو ناکامی اٹھانا پڑی،مشرق وسطی میں امریکہ کے اربوں ڈالر خاک میں مل گے۔

علامہ راجہ ناصرعباس کاکہنا تھاکہ پاکستان کو غیرمستحکم کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے پاکستان کا غیر مستحکم ہونا پورے خطے کے لئے نقصان دہ ہے۔ اس وقت جو حالات ہیں اگر ان حالات میں کوئی بھی حکمران ہوتا ہم بحران پیدا کرنے میں ہرگز کردار ادا نہیں کرتے۔ وطن عزیز کو بحرانوں سے نکالنے کے لئے یہ وقت بصیرت اور اتحاد کا تقاضہ کرتا ہے،ارض پاک کوفرقہ وارانہ مسائل میں الجھا کرکمزورکرنے کی سازش مل کر ناکام بنائیں گے۔ہمیں تکفیر و توہین کی راہ روکنے میں کردار ادا کرنا ہو گا۔

انہوں نے مزید کہاکہ ہماری افواج اس ملک کا مضبوط دفاع ہیں۔ان پر الزام تراشی دشمنوں کو تقویت دینے کے مترادف ہے۔وہ سیاسی قوتیں ملک کادفاع نہیں کر سکتی جن کے اثاثے اور اولادیں بیرون ممالک میں پروان چڑھ رہی ہیں۔وطن عزیز سیاسی بحران کاقطعی متحمل نہیں۔دشمن کے ایجنڈے کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔انہوں نے کہا کہ اہلسنت ہماری جان ہیں دکھ سکھ کی ہرگھڑی میں ایک دوسرے کے ساتھ کھڑے ہوں گے۔

Tags
Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close