مشرق وسطی

قاسم سلیمانی ایک شخص کا نام نہیں بلکہ ایک تحریک کانام ہے

شیعہ نیوز:شہید جنرل قاسم سلیمانی نے مختلف ملکوں میں استقامتی فورس کی تربیت کرکے، عالم اسلام میں عظیم دفاعی صلاحیت پیدا کی ہے۔

یہ بات صدر ایران ڈاکٹر ابراہیم رئیسی نے شہید جنرل قاسم سلیمانی کی دوسری برسی کی منتظمہ کمیٹی کے ارکان کے ساتھ ایک ملاقات کے موقع پر کہی ۔صدر سید ابراہیم رئیسی کا کہنا تھا کہ قاسم سلیمانی ایک شخص کا نام نہیں بلکہ ہر معاشرے کے لیے پیغام کی حامل ایک تحریک کانام ہے۔ انہوں نے کہا کہ شہید قاسم سلیمانی کو عالم اسلام کی ایک بااثر شخصیت کے طور پر پوری دنیا میں متعارف کرانے کی ضرورت ہے۔

صدر ایران نے کہا کہ شہید سلیمانی بیک وقت نفسیاتی اور عسکری جنگوں کے محاذ پر نہ تھکنے والی شخصیت تھے اور انہیں اس بات کا بڑا دکھ تھا کہ کچھ لوگ تکفیریت اور زہریلے پروپیگنڈے کا شکار ہوگئے ہیں- انہوں نے کہا کہ شہید قاسم سلیمانی مختلف طریقوں سے ایسے لوگوں کی اصلاح کے خواہاں تھے۔

صدر سید ابراہیم رئیسی نے کہا کہ ہمیں ان عوامل پر غور کرنے کی ضرورت ہے جن کی بنیاد پر شہید قاسم سلیمانی نے عراقیوں اور شامیوں کے درمیان ان ملکوں کے دفاع اور ظلم کے خلاف جنگ کے لیے بہترین فورس تربیت کی۔ انہوں نےکہا کہ شہید قاسم سلیمانی نے اپنے اس اقدام کے ذریعے عالم اسلام میں عظیم دفاعی صلاحیت پیدا کردی ہے۔

شہید سلیمانی کی یاد منانے کے علاوہ، ہمیں ان شہداء کے ناموں اور یادوں کا احترام کرنا چاہیے جنہوں نے مقدسات کا دفاع کیا تاکہ ان کے حقوق کو مزید ادا کیا جا سکے۔” یہ درست ہے کہ شہید سلیمانی ان شہداء کی علامت ہیں جنہوں نے مقدسات کا دفاع کیا، لیکن خود حاجی قاسم نے اس بات پر زور دیا کہ شہیداء دفاع حرم کی یاد کو عزت دی جائے۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button