پاکستانی شیعہ خبریں

قومی اداروں کی نجکاری سے ہزاروں افراد کے بےروزگار ہونے کا خدشہ ہے، علامہ باقر زیدی

شیعہ نیوز: مجلس وحدت مسلمین سندھ کے سیکرٹری جنرل علامہ باقر عباس زیدی نے مختلف قومی اداروں کی نجکاری، بڑھتی ہوئی بے روزگاری اور مہنگائی کے خلاف شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ وفاقی حکومت نے جس منشور کا اعلان کرکے عوام سے مینڈیٹ حاصل کیا تھا، آج اس منشور کی معمولی سی جھلک بھی کہیں دکھائی نہیں دے رہی، اسٹیل مل، ریڈیو اور دیگر سرکاری اداروں کے ملازمین سے ان کی ملازمتیں چھین کر سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت عوام کو کسی بھی قسم کا ریلیف دینے میں مکمل طور پر ناکام ہوگئی ہے، ہوشربا مہنگائی نے عام آدمی کی زندگی اجیرن کردی ہے، جس فلاحی ریاست کے خواب دکھائے گئے تھے اس کا کہیں وجود نظر نہیں آتا۔

انہوں نے کہا کہ آئے روز بجلی و گیس اور دیگر اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں غیر معمولی اضافہ عوام کے لئے ایک نا ختم ہونے والی اذیت بن چکا ہے، وزیراعظم کو یہ بات ذہن نشیں کرلینی چاہیئے کہ محض خوشنما وعدوں کے سہارے عوام کو نہیں بہلایا جا سکتا، عوام کا رہن سہن آسان بنانے کے لئے عملی اقدامات کرنے ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ قومی اداروں کی نجکاری سے ہزاروں برسر روزگار افراد کے بے روزگار ہونے کا خدشہ ہے، اداروں کی ری اسٹرکچنگ اور اصلاحات کے نام پر لوگوں سے ان کا روزگار چھیننا ظلم ہے، جو ادارے بحران کا شکار ہیں ان میں اعلیٰ انتظامیہ کو بہترین بزنس پلان متعارف کرانا چاہیئے تاکہ انہیں نفع بخش بنایا جا سکے، ادارے اعلیٰ انتظامی افسران کی نااہلی کے باعث تنزلی کا شکار ہوتے ہیں جس کی سزا کارکنوں کو دینا ناانصافی اور ظلم ہے۔

Tags
Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close