دنیا

سعودی اسرائیلی تعلقات کے حوالے سے امریکی صدر کے مشیر کا اہم دعویٰ

امریکی صدر کے داماد اور مشیر نے صیہونی حکومت کے ساتھ سعودی عرب کے تعلقات کے قیام کو ناگزیر قرار دیا ہے۔

جیریڈ کوشنر نے صیہونی حکومت کے ساتھ تعلقات کے قیام کے لیے مراکش کی تیاری کی خبر سامنے آنے کے بعد کہا ہے کہ سعودی عرب اور اسرائيل کے درمیان بھی تعلقات قائم ہو کر ہی رہیں گے اور اس سے بچا نہیں جا سکتا۔

رویٹرز کے مطابق امریکی صدر کے داماد اور مشیر نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ اب صرف وقت کا مسئلہ باقی بچا ہے اور جلد یا بدیر، ان دونوں حکومتوں کے درمیان تعلقات قائم ہو ہی جائيں گے۔

کوشنر کے اس بیان سے کچھ ہی پہلے امریکی صدر نے ٹویٹ کر کے کہا ہے کہ مراکش، اسرائيل کے ساتھ مکمل طور پر تعلقات قائم کرنے کے لیے تیار ہو گيا ہے۔

مصر، اردن، متحدہ عرب امارات، بحرین اور سوڈان کی عارضی حکومت کے بعد اسرائيل سے تعلقات قائم کرنے والی مراکش کی سلطنت، چھٹی عرب حکومت ہے۔

امارات، بحرین اور سوڈان نے پچھلے مہینوں کے دوران امریکہ کے دباؤ میں آ کر اسرائیل سے تعلقات قائم کر لیے ہیں۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close