مشرق وسطی

سعودی آئل فیلڈ اور ریفائنری پر اب تک کا سب سے بڑا ڈرون حملہ

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) سعودی عرب کی نیشنل آئل کمپنی آرامکو سے وابستہ الشیبہ آئل فیلڈ اور ریفائنری پریمن کے ڈرون طیاروںنے اب تک کا سب سے بڑا ڈرون حملہ کیا ہے۔

المسیرہ ٹیلی ویژن چینل نے خبر دی ہے کہ جارح سعودی اتحاد کے وحشیانہ حملوں کے جواب میں یمنی فوج اور عوامی رضاکار فورس کے دس ڈرون طیاروں نے سعودی عرب کی نیشنل آئل کمپنی آرامکو سے وابستہ الشیبہ آئل فیلڈ اور ریفائنری پر اب تک کا سب سے بڑا حملہ کیا ہے۔

یمنی فورسز کے ترجمان یحیی سریع نے کہا ہے کہ یمنی فورسز نے سعودی عرب کے اندر سعودیہ کی تیل کمپنی آرامکو پر 10 ڈرون کے ذریعہ حملہ کیا ہے یمنی فورسز کا سعودی عرب پر یہ سب سے بڑا ڈرون حملہ ہے۔

یمنی فوج کے ترجمان نے بتایا کہ سعودی عرب کی الشیبہ آئل فیلڈ اور آئل ریفائنری سعودی عرب کی سب سے بڑی آئل فیلڈ اور ریفائنری ہے جس میں ایک ارب بیرل تیل ذخیرہ کرنے کی گنجائش ہے۔

یمنی فوج کے ڈرون یونٹ نے گذشتہ تین مہینے کے دوران دشمن کے فوجی مراکز اور اہم تنصیبات پر پچاس بار سے زائد حملے کئے جن میں سے سولہ حملے ابہا ہوائی اڈے پر، چودہ حملے جیزان ہوائی اڈے ، گیارہ حملے نجران ہوائی اڈے اور نو حملے خمیس مشیط فوجی چھاؤنی پر کئے گئے۔

یمنی فوج کے کامیاب حملوں کے بعد یمن کی جنگ میں سعودی عرب کا سب سے بڑا اتحادی ملک، متحدہ عرب امارات اب اس اتحاد سے بتدریج باہر نکلنے کی کوشش کر رہا ہے۔

اس درمیان یمن کی عوامی انقلابی تحریک انصاراللہ کے سیاسی دفتر کے رکن نے یمنی فوج کے اس بڑے ڈرون حملے کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ یمنی عوام اس بات کی اجازت نہیں دیں گے کہ دشمن ان کے ملک پر مسلط ہو جائیں۔

انہوں نے کہا کہ سعودی عرب کی آئل فیلڈ اور آئل ریفائنری پر یمنی فوج کا یہ بڑا حملہ جارح سعودی اتحاد کو واضح پیغام ہے۔

انصاراللہ کے سیاسی دفتر کے ایک اور رکن محمد البخیتی نے بھی کہا ہے کہ یمن کی مسلح افواج میزائل اور ڈرون کے میدان میں اپنی توانائیوں کا دائرہ بڑھانے کی کوشش جاری رکھے گا اور یمن پر جارحیت کرنے والے ملکوں کو چاہئے کہ وہ یمنی فوج اور عوامی رضاکارفورس کے انتباہات کو سنجیدگی سے لیں۔

Tags
Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close