مشرق وسطی

شہید قاسم سلیمانی پوری امت کے شہید ہے,نعیم قاسم

شیعہ نیوز:شیخ "نعیم قاسم” لبنان میں حزب اللہ کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل نے کہا  کے کمانڈر جنرل حاج قاسم سلیمانی کی شہادت کی دوسری برسی کے موقع پر اسلامی جمہوریہ ایران بیروت کے سفارتخانے میں ایک تقریب میں شرکت کی۔

حزب اللہ کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل نے تقریب میں کہا: "اس شہادت نے نہ صرف مزاحمت کی صلاحیت اور قدر کو کم نہیں کیا بلکہ مزاحمت کے حوصلے اور مزاحمت کی حیثیت کو بھی بلند کیا ہے۔ شہید قاسم سلیمانی اپنے وطن صرف ایران کے نہیں بلکہ پوری امت کے شہید ہے،”وہ انسانی امداد اور ایمان کا نمونہ ہے جس نے فلسطینی کاز کے لیے ذاتی کامیابیوں کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔”

شیخ نعیم قاسم نے شہید سلیمانی کے بارے میں اپنے تبصروں کو جاری رکھتے ہوئے کہا: "آپ نے فلسطین کا کمپاس اس طرح قائم کیا ہے کہ کوئی اور ہمیں راستے سے نہیں ہٹا سکتا۔ شہید سلیمانی نے خطے میں متحدہ مزاحمت کے لیے ہمارے ممالک کے درمیان مادی رکاوٹوں کو توڑا۔ "یہ کیسے نہیں ہوسکتا جب کہ ہمارا دشمن متحد ہے؟ اور ہم متحد نا ہو۔

انہوں نے خطے کی مظلوم قوموں کے لیے ایران کی امداد کا حوالہ دیتے ہوئے مزید کہا: امام خمینی (رح) نے فلسطین پر توجہ مرکوز کرکے مزاحمت کا راستہ بنایا اور امام خامنہ ای نے اس راستے کو جاری رکھا۔

حزب اللہ کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل نے تاکید کی: "یہ مزاحمتی گروہوں اور اس سرزمین کے مالکان کا حق ہے کہ وہ برائی کے محور کے خلاف تعاون کریں۔ "وہ لوگ جو ہمیں دہشت گرد کہنے پر راضی ہوئے، جب کہ وہ خود عالمی جبر اور قتل عام کا اظہار کر رہے تھے۔”

شیخ نعیم قاسم نے یہ بھی کہا کہ اگر مزاحمت نہ ہوتی تو اس خطے پر داعش کی حکومت ہوتی اور جنوبی لبنان میں صیہونی بستیاں قائم ہو جاتیں ۔

شیخ نعیم قاسم نے مزید تاکید کرتے ہوئے کہا: مزاحمت ایک فطری مسئلہ ہے اور مزاحمت نہ کرنا اور اسے قبول نہ کرنا غیر فطری اور قابل اعتراض ہے۔ یہ ہمارا وطن ہے اور ہم اسے قابضین کے حوالے نہیں کریں گے ۔ دفاع جائز ہے اور دفاع ہمارا حق ہے نہ کہ قبضہ کیا جائے۔

"یقین رکھیں کہ مزاحمت کی بندوق، مجاہدین کے ہتھیار اور اس قوم کے مردوں، عورتوں، بوڑھوں اور بچوں کا دشمن کا مقابلہ کرنے اور مزاحمت کرنے کے لیے متحد ہونا ہی آزادی کا باعث بنے گا، اور اس آپشن کے بغیر آزادی حاصل پونا ممکن نہیں۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button