پاکستانی شیعہ خبریںہفتہ کی اہم خبریں

شیعہ نسل کشی میں ملوث تکفیری دہشت گردوں کو سزائے موت

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) ڈاکٹر نسیم جعفری اور شہریار رضوی کی ٹارگٹ کلنگ میں ملوث کالعدم سپاہ صحابہ کے سفاک دہشت گردوں احمد اور نعیم خان کو جرم ثابت ہونے پر آج 27 ستمبر 2019 کو انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کے جج نے سزائے موت سنا دی۔

رپورٹ کے مطابق کراچی کی انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کے جج نے ڈاکٹر نسیم جعفری اور دوکاندار شہریار رضوی کی ٹارگٹ میں ملوث کالعدم سپاہ صحابہ کے دہشت گردوں احمد اور نعیم خان کا جرم ثابت ہونے پر دونوں تکفیری دہشت گردوں سزائے موت دیئے جانے کا حکم دیتے ہوئے دونوں دہشت گردوں کو شہید ڈاکٹر ڈاکٹر نسیم عون جعفری اور شہریار عباس رضوی کے اہل خانہ کو 2،2 لاکھ روپے بھی ادا کرنے کا حکم دیا ہے۔

زرائع کا کہنا ہے کہ تکفیری دہشت گردوں احمد اور نعیم خان نے 14 جون 2014 کو جمشید روڈ کے علاقے میں دوکان پر فائرنگ کر کے شہریار عباس رضوی کو شہید کر دیا تھا، اس واقعے کا مقدمہ شہید شہریار عباس کے بھائی کی مدعیت میں نامعلوم دہشت گردوں کے خلاف جمشید کوارٹر تھانے میں درج کیا گیا تھا، جبکہ دوسری کاروائی میں تکفیری دہشت گردوں احمد اور نعیم خان نے اپنے ایک اور دہشت گرد ساتھی کی مدد سے 30 اگست 2014 کو حسینی اما م بارگاہ کورنگی ڈھائی نمبر کے قریب کلینک پر فائرنگ کر کے ڈاکٹر سید نسیم عون جعفری کو شہید کیا تھا۔

انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کے جج نے پولیس اور استغاثہ کی جانب سے پیش کئے گئے تمام ثبوتوں اور گواہوں کے بیانات کی روشنی میںآج اپنا فیصلہ سناتے ہوئے ڈاکٹر نسیم عون جعفری اور شہریار عباس رضوی کے قاتل کالعدم سپاہ صحابہ کے تکفیری دہشت گردوں احمد اور نعیم خان کو سزائے موت دیئے جانے کا حکم نامہ جاری کر دیا۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button