مشرق وسطی

شکست امریکہ کا مقدر بن چکی ہے: بشارالاسد

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) شام کے صدر بشار الاسد کا کہنا ہے کہ ویتنام، عراق اور افغانستان میں ذلت آمیز شکستوں کا سامنا کرنے کے بعد امریکا کو مزید بہت سی شکستوں کا سامنا ہے۔

شام کے صدر نے جمعرات کو دمشق کی دفاعی اکیڈیمی کا دورہ کیا۔ وہاں اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کہ اپنے جائز حقوق کے حصول کے لیے ہم علم و سائنس اور عزم کے ساتھ اپنے راستے پر آگے بڑھتے رہیں گے۔

بشار اسد نے کہا کہ شام ابھی تک جنگ کی لپیٹ میں ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم مزاحمت کو اپنا کر آگے بڑھتے رہیں گے۔

شام کے صدر نے کہا کہ امریکا نے اربوں ڈالر کمانے کے لیے افغانستان اور عراق کو جنگ کی آگ میں جھونک دیا۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ کو ہر جگہ منہ کی کھانی پڑی اور وہ ناکام رہا۔

بشار الاسد کا کہنا تھا کہ مضبوط عزم کے ساتھ مزاحمت ہی واحد راستہ ہے جس کی مدد سے زندہ رہا سکتا ہے۔ واضح رہے کہ شام کو گزشتہ دس سال سے جنگ کا سامنا ہے۔ شام میں امریکہ، صیہونی حکومت اور بعض عرب ممالک کے حمایت یافتہ دہشت گرد گروہ سرگرم ہیں۔ ان میں سے اکثر کو شامی فوج نے شکست دے دی اور فرار پر مجبور کر دیا۔

اس وقت شمالی شام کے بعض علاقوں میں دہشت گرد گروہ سرگرم ہیں جنہیں اس وقت امریکہ اور ترکی کی حمایت حاصل ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button