پاکستانی شیعہ خبریںہفتہ کی اہم خبریں

ملعون عامر لیاقت کی جانب سے مکتب تشیع کی بدترین توہین،شیعیان حیدرکرارؑ میں اشتعال

شیعہ نیوز:پاکستان کے بدنام زمانہ جعلی اینکرواسکالر اور پاکستان کے ممبر قومی اسمبلی عامر لیاقت حسین کی جانب سے ایک بار پھر مکتب تشیع کی بدترین توہین پر شیعیانِ حیدر کرارؑ میں شدید اشتعال پایا جارہا ہے ۔ وزیر اعظم عمران خان سے عامر لیاقت ملعون کی پارٹی اور اسمبلی رکینت کی معطلی اور توہین مکتب و مذہب کے مقدمے کے اندراج کا مطالبہ زور پکڑ گیا۔

تفصیلات کے مطابق بدکردار اور بد اخلاق نام نہاد مذہبی اسکالر، ٹی وی اینکر ،پی ٹی آئی کے رکن قومی اسمبلی اور منافقت کے علمبردار عامر لیاقت حسین کی ایک اور متناذعہ اور توہین مکتب اہل بیتؑ پر مبنی ویڈیو منظرعام پر آگئی ہے ۔

سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے عامر لیاقت متنازعہ مدنی مسجد طارق روڈ کے باہر دیوبند مکتب فکر کے پیروکاروں کے ساتھ خوش گپیوں میں مصروف نظر آرہے ہیں اس دوران کسی نے ویڈیو ریکاڈنگ کی جس میں صاف سنا جاسکتا ہے کہ عامر لیاقت نے موقع پر موجود دیوبند علماء وعوام کے سامنے کہا کہ شیعہ عالم دین عباس حیدر عابدی نے میرے بھائی عمران لیاقت کو شیعہ کیا اور پھر مجھے بھی دعوت دی جس پر میں نے کہا کہ بھئی دیکھیں کھانا تو انسانی فضلہ بن سکتا ہے لیکن انسانی فضلہ کھا نا نہیں بن سکتا ۔شیعہ مکتب فکر کے خلاف اس انتہائی غلیظ اور گھٹیا زبان کے استعمال کے بعد شیعیان حیدرکرارؑ کے مذہبی جذبات بری طرح متاثر ہوئے ہیں۔ ملت جعفریہ کے مختلف طبقات ، علمائے کرام، ذاکرین عظام ،ملی تنظیمات اور عزاداران حسینی کی جانب سے عامرلیاقت سے معافی ،وزیر اعظم عمران خان سے اس بدکار کی معطلی اور اعلیٰ عدلیہ سے توہین مذہب کے دفعات کے تحت مقدمے کےاندراج کا مطالبہ زور پکڑتا جارہا ہے ۔

واضح رہے کہ عامر لیاقت انتہائی متعصب اور گھٹیا انسان ہے، اس نے بارہا مختلف ٹی وی شوز میں مکتب اہل بیتؑ کے مقدسات کی توہین کی کوشش کی ہے ، اکثر وبیشتر انتہائی غیر اخلاقی اور پست انداز کی حرکتیں کرکے بھی مشہور ہونے کی کوشش کرتا ہے ، پیمرا کوبھی چاہئے کہ وہ اس جعلی اینکر پر مکمل پابندی عائد کرے ۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button