پاکستانی شیعہ خبریں

زائرین کی تعداد کو محدود کرنے کی ہر کوشش اور کوٹہ نظام کی مخالفت کریں گے۔

شیعہ نیوز:مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری سے آل پاکستان پلگرمز ایسوسی ایشن کے وفد نے ملاقات کی ملاقات میں زیارات گروپ آرگنائزراور زائرین کو درپیش مشکلات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ایسوسی ایشن کے معاون خصوصی علی حسین نقوی نے نمائندگی کرتے ہوئے کہا کہ وزارت مذہبی امور کے تحت زیارات کا عمل پیچیدہ اور عام آدمی کے لیے مشکلات کا باعث بنے گا۔ حکومت کو چاہئیے کہ وہ کسی پالیسی کے اجرا سے قبل قافلہ سالاروں کو اعتماد میں لے۔پورے ملک میں موجود ٹریولز ایجینسیاں صوبائی محکمہ سیاحت کے ماتحت ہیں۔وہ سیاحتی اداریجوایران،عراق اور شام کے لیے زائرین کو لے کر جاتے ہیں صرف انہیں وزارت مذہبی امور MORA کے ماتحت کرنا دوہرامعیار اور امتیازی قدم ہے۔اگر یہی پالیسی طے کرنی ہے تو پھر دنیا کے دیگر ممالک کے سفر پر لے کر جانے والے اداروں کو بھی مذکورہ وزارت کے تابع کیا جانا چاہئیے۔ اگرعام آدمی کا بیرونی ممالک کا سفر وزارت داخلہ کی منظوری سے مشروط نہیں تو پھر صرف زائرین کو اس کا پابند کیسے کیا جا سکتا ہے۔ایسی کوئی شرط قابل قبول نہیں جس سے زائرین کے سفر میں کسی بھی قسم کی رکاوٹ پیدا ہو۔اجلاس میں اتفاق رائے سے طے کیا گیا کہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان اور حکومتی کمیٹی سے زیارت پالیسی کی حوالے سے پانچ رکنی کمیٹی ملاقات کرے گی اور انہیں اپنے تحفظات سے آگاہ کیا جائے گا۔زیارات کے سفر کو وزارت مذہبی امور کے ماتحت کرنے کی کسی صورت تائید نہیں کی جائے گی۔زائرین کی تعداد کو محدود کرنے کی ہر کوشش اور کوٹہ نظام کی مخالفت کریں گے۔پلگرمز ایسوسی ایشن کے دائرہ کار کو وسیع کرنے کے لیے ملک بھر میں ممبر سازی کے عمل کو تیز کیا جائے گا۔زیارت پالیسی کے حوالے سے ایک تفصیلی پریس کانفرنس کے انعقاد پر بھی اتفاق رائے ہوا۔علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا کہ ایسے کسی حکومتی اقدام پر سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا جوکہ زائرین کی مشکلات میں اضافے کا سبب بنے۔ملاقات میں موسیٰ رضا، سلمان حیدر، جواد شاہ، عابد علی، عباس علی، سید طالب، علی رضوی، شاکر علی، عابد حسین، فیاض باقری، عدنان نادر، علی عباس، جعفر کربلائی، ضیاء عباس، ذولفقار علی، مسعود حسین، جواد رضا، کاظم باوا شامل تھے۔

 

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close