مشرق وسطی

دہشتگردوں کی شکست کے بعد عالمی دہشتگرد ممالک نے شام پر حملے کی منصوبہ بندی کرلی

شیعیت نیوز: برطانوی اخبار نے دعوٰی کیا ہے کہ شام پر فضائی حملے آج رات سے شروع کیے جاسکتے ہیں، برطانوی آبدوزوں کو شام کو نشانےپر رکھنے کی ہدایت کردی گئی ہے۔

برطانوی وزیر اعظم کی جانب سےآج کابینہ کا ہنگامی اجلاس آج طلب کیا گیا ہے،جس میں حملےکی منظوری لینے کا امکان ہے،برطانوی وزیراعظم نے کہاہےکہ اتحادیوں کے ساتھ مل کر حکمت عملی بنارہے ہیں۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے میزائل حملے کی دھمکی پر وائٹ ہاؤس نے واضح کیا ہےکہ صدر نے اپنے ٹوئٹ میں صرف ایک آپشن کا ذکر کیا، آپشن اور بھی بہت ہیں، لیکن ابھی شام پر حملے کےلیے حتمی فیصلہ یا وقت کا تعین نہیں کیا گیا۔

صدر ٹرمپ روس اورشام کو کیمیائی حملے کا ذمے دار سمجھتے ہیں، امریکا اور برطانیہ کی دھمکیوں پر روس اور ایران نے شام کا ساتھ دینے کا اعلان کیا ہے۔

صدر پیوٹن نے اسرائیلی وزیراعظم کو بھی خبردارکیا ہےکہ وہ شام میں کارروائی سے گریز کریں۔

روسی فوج کا کہناہےکہ شام کی صورتحال اور امریکی بحریہ کی نقل و حرکت پر گہری نظر ہے، روسی فوج نے مبینہ کیمیائی حملے کو وائٹ ہیلمٹس نامی تنظیم کا ڈرامہ قرار دیاہے۔

ایران کے سپریم لیڈر کے مشیر نے شامی وزیرخارجہ سےملاقات میں غیر ملکی جارحیت کے خلاف ساتھ دینے کا یقین دلایا، ایران کے ممکنہ جوابی اقدام کے پیش نظر اسرائیل بھی چوکس ہوگیا ہے۔

واضح رہے کہ شام میں عالمی دہشتگرد ممالک امریکا، برطانیہ اسرائیل نے سعودی عرب کے پیسے سے بشار حکومت کو گرانے کے لئے دنیا بھر کے دہشتگردوں کو جمع کرکے چھ سال سے سول جنگ لڑرہا ہے، جبکہ شام اور اسکے اتحادی ممالک اور گروہوں نے ان چھ سالوں میں امریکی، سعودی اور اسرائیلی حمایت یافتہ دہشتگردوں کو بری طرح سے شکست دے کر شام کو تقریباً آزاد کروالیا ہے جسکے بعد ان دہشتگرد ممالک نے کیمائی ہتھیار کے استمعال کا بہانہ بناکر شام پر حملے کی دھمکی دی ہے، ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر امریکا اس بار شام پر حملہ کرتا ہے تو یہ اسکی آخری غلطی ہوگی کیونکہ شام عراق و افغانستان نہیں بلکہ امریکا کے لئے دوسرا ویت نام ثابت ہوگا۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close