مشرق وسطی

صیہونی فوجیوں کی فائرنگ سے 53 فلسطینی زخمی

شیعہ نیوز:فلسطین کی انجمن ہلال احمر نے بتایا ہے کہ جمعہ کے روز غرب اردن کے صوبے نابلس کے برقا اور بیت دجن پر صیہونی فوجیوں کے حملے میں کم سےکم 53 افراد زخمی ہوئے ہیں ۔ زخمی ہونے والوں کی اکثریت کا تعلق شمال مغربی شہر نابلس کے فلسطینی گاؤں برقہ سے ہے۔

جمعرات کو بھی صیہونیوں نے نابلس کے برقا علاقے میں فلسطینیوں پر فائرنگ کی تھی جس سے 127 فلسطینی زخمی ہوئے اور کئی فلسطینیوں کو گرفتار بھی کرلیا گیا تھا۔

فلسطینی ذرائع کے مطابق غاصب صیہونیوں نے حومش ٹاؤن کے قریب واقع فلسطینیوں کےایک قبرستان پر حملہ کرکے اسے مسمار کردیا ہے۔

غاصب صیہونی فوجیوں نے اس علاقے میں ہلال احمر کی ایمبولینسوں کو بھی فائرنگ کانشانہ بنایا ہے۔

دوسری جانب حماس کے سربراہ اسما‏عیل ہنیہ نے صیہونی دشمن کو خبردار کرتے ہوئے کہا کہ جارحیت اور محاصرہ استقامتی محاذ کے حوصلے پست نہیں کرسکتا۔

فلسطینی عوام نئی صیہونی کالونیوں کی تعمیر کے خلاف مظاہرہ کرتے ہیں۔ صیہونی حکومت عالمی برادری کے مطالبات پر توجہ دیئے بغیر امریکہ کی حمایت سے صیہونی کالونیوں کی تعمیر کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہے تمام صیہونی کالونیاں بین الاقوامی قوانین کے مطابق غیرقانونی ہیں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے تیئس دسمبر دوہزار سولہ میں قرار داد تیئس چونتیس منظور کر کے صیہونی حکومت سے مطالبہ کیا تھا کہ مقبوضہ فلسطین میں تمام صیہونی کالونیوں کی تعمیر فورا روکی جائے۔ صیہونی حکومت صیہونی کالونیاں تعمیر کر کے فلسطینی علاقوں کا جغرافیائی ڈھانچہ تبدیل اور صیہونیت کا رنگ دینا چاہتی ہے تاکہ فلسطینی علاقوں میں اپنا قبضہ مضبوط بنا سکے ۔

صیہونی فوجیوں کے دشمنانہ اقدامات ایسے عالم میں جاری ہیں کہ اس سے قبل فلسطینی استقامتی گروہ، غرب اردن اور بیت المقدس میں صیہونیوں کے جارحانہ اقدامات کے بارے میں خبردار کر چکے تھے۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button