پاکستانی شیعہ خبریںہفتہ کی اہم خبریں

پنجاب پولیس نے چوہنگ واقعے کا الزام عزاداروں پر لگا دیا

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) پنجاب میں ابن زیاد کی باقیات پنجاب پولیس شیعہ دشمنی میں کھل کر سامنے آگئی،لاہور کے علاقے چوہنگ میں پیش آنے والے واقعے کا ذمہ دار عزاداروں کو قرار دے ڈالا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کے علاقے چوہنگ میں 9ویں محرم الحرام کی مناسبت سے برآمد ہونیوالے ماتمی جلوس پر فائرنگ اور پتھراؤ سے 100عزادار زخمی ہوگئے۔ افسوسناک واقعہ ملتان روڈ پر دربار بھولے شاہ امام بارگاہ حیدر کالونی چوہنگ میں پیش آیا۔

9 محرم الحرام کی شام تحریک لبیک پاکستان کی مقامی قیادت اور مسجد بلال کے خطیب نے بہانہ بنا کر جلوس عزا پر پتھراؤ اور فائرنگ کروائی جس سے 100 مومنین زخمی ہوئے اور بہادر پنجاب پولیس کے جوان بھاگ کھڑے ہوئے۔ واقعے کے بعد شیعہ عزاداروں نے دھرنا دے کر ملتان روڈ بلاک کردی ۔

یہ خبر بھی پڑھیں لاہور، چوہنگ میں جلوس عزاء پر حملہ کس نے کروایا؟

پنجاب پولیس کی سپیشل برانچ نے اس واقعے کی رپورٹ میں عزادان امام حسین ؑ کو ہی ذمہ دار قرار دے ڈالااور اپنی رپورٹ میں لکھا کہ عزاداروں نے مسجد پر حملہ کیا تھا۔ ملت جعفریہ میں پنجاب پولیس میں موجودابن زیاد کی باقیات کی اس حرکت پر شدید یشویش کی لہر پائی جاتی ہے۔

واضح رہے کہ اس کے علاوہ پنجاب پولیس کی جانب سے پورے صوبے میں عزاداران امام حسین ؑ پر گھروں میں مجالس عزا منعقد کروانے پر ایف آئی آر کاٹی جارہی ہیں اور بانیان جلوس کو دھمکایا جارہا ہے کہ وہ عزاداری امام حسینؑ منعقد نہ کریں ورنہ ان کے نام فورتھ شیڈول میں ڈال دیے جائیں گے۔

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button