مشرق وسطی

شامی فوج کا صوبہ ادلب کے 50 فیصد حصہ پر کنٹرول

شیعہ نیوز (پاکستانی شیعہ خبر رساں ادارہ) شامی فوج نے وہابی دہشت گردوں پر مہلک ضرب وارد کرتے ہوئے صوبہ ادلب کے 50 فیصد حصہ کا کنٹرول سنبھال لیا ہے۔

شام کے الاخباریہ ٹی وی چینل نے اعلان کیا ہے کہ شامی فوج نے صوبہ ادلب کے تقریبا پچاس فیصد علاقوں کو دہشت گردوں کے قبضے سے آزاد کرا لیا ہے۔ صوبہ ادلب، شام میں دہشت گردوں کا آخری ٹھکانہ ہے۔

شام کی فوج نے کئی کمروں پر مشتمل جبھۃ النصرہ دہشت گردوں کے ایک انڈر گراؤنڈ اڈے کا پتہ لگا کر وہاں موجود دہشت گردوں کا صفایا کر دیا ہے۔

جبھۃ النصرہ فرنٹ کے دہشت گرد اس زیرزمین اڈے سے متصل پیچیدہ ٹنل نیٹ ورک کے ذریعے ایک دوسرے سے رابطے میں رہتے تھے۔

شام کی فوج نے دوہزار گیارہ کے بعد سات فروری کو پہلی بار صوبہ ادلب کے ایک اہم شہر سراقب کو دہشت گردوں کے قبضے سے آزاد کرانے میں کامیابی حاصل کی تھی۔

سراقب کی آزادی کے نتیجے میں شام کی فوج دہشت گردوں کی سپلائی لائن کاٹنے اور شامی فوج نے دمشق حلب ہائی وے پر کنٹرول حاصل کیا۔

اس سے قبل شامی فوجیوں نے صوبہ ادلب کے کئی دیہاتوں کو دہشت گردوں سے پاک کردیا اور شامی فوج صوبہ کے تفتناز ايئر پورٹ کے قریب پہنچ گئی ہے۔

Tags
Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close